سندھ ، رینجرز کے خصوصی اختیارات میں 90روز کی توسیع ، چھاپے گرفتاریاں سنیپ چیکنگ ہوگی چوکیاں قائم کی جاسکیں گی

سندھ ، رینجرز کے خصوصی اختیارات میں 90روز کی توسیع ، چھاپے گرفتاریاں سنیپ ...

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)سندھ کابینہ نے رینجرز کو حاصل خصوصی اختیارات میں 90 روز کی توسیع کی منظوری دے دی۔ رینجرز خصوصی اختیارات کے تحت ملزموں کوگرفتار کرکے تحقیقات کرسکے گی۔وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی سربراہی میں ہونے والے سندھ کابینہ کے اجلاس میں رینجرز کو انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت خصوصی اختیارات دینے کا فیصلہ کیا گیا۔اجلاس میں پولیس کی صلاحیت بڑھانے کا بھی فیصلہ کیا گیا مراد علی شاہ نے کہا کہ حکومت پولیس کی خصوصی تربیت پر توجہ دے رہی ہے اور کوشش کررہی ہے کہ پولیس کی کی کارکردگی کو مزید بہتر کرے۔خیال رہے کہ رینجرز کے پولیسنگ اختیارات کا معاملہ وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے درمیان لفظی جنگ کاباعث بنتا رہا ہے۔وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار نے گزشتہ ہفتے کہا تھا کہ وزارت داخلہ رینجرز کو خصوصی اختیارات کے معاملے پر سندھ حکومت سے رابطے میں ہے۔سندھ حکومت نے رواں سال جنوری میں رینجرز کے خصوصی اختیارات میں 90 روز کی توسیع کی تھی۔سندھ کی صوبائی وزارت داخلہ نے چند روز قبل ہی وزیراعلیٰ مراد علی شاہ کو انسداد دہشت گردی ایکٹ 1997 کے تحت رینجرز کے خصوصی اختیارات میں 90 روز کی توسیع کے لیے سمری بھیجی تھی جس کی اب منظوری دے دی گئی ہے۔قبل ازیں یہ خبریں بھی سامنے آرہی تھیں کہ سندھ حکومت رینجرز کو خصوصی اختیارات دینے کے لیے 'پنجاب ماڈل' اپنانے پر غور کررہی ہے جس کے بعد پیراملٹری فورس دہشت گردوں اور جرائم پیشہ افراد کے خلاف کارروائی میں پولیس کی مدد کرے گی۔ذرائع کو صوبائی حکومت کے ترقیاتی کاموں سے جڑے دو عہدیداران نے بتایا تھا کہ کہ سندھ حکومت 15 اپریل کو ختم ہونے والے رینجرز کے خصوصی اختیارات کی توسیع نہیں چاہ رہی۔ ، توسیع کے بعد حاصل شدہ اختیارات کے بعد رینجرز چھاپے اور گرفتاریاں کرسکتی ہے رینجرز پٹرولنگ ، سنیپ چیکنگ کرسکے گی اور چوکیاں قائم کرسکے گی جبکہ ان اختیارات کے رینجرز 90دن تک کسی بھی ملزم کو اپنی تحویل میں رکھ سکتی ہے۔ سندھ کابینہ نے رینجرز کو یہ اختیارات انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت دئیے ہیں۔ رینجرز کو16اپریل2017سے خصوصی اختیارات دیئے گئے ہیں۔صوبائی کابینہ کے سینئر وزرا نے رینجرز کو اختیارات کی حمایت کی ہے۔ حمایت کرنیوالے وزرا میں سید سردار شاہ ،جام مہتاب ڈہر، جام خان شورو، نثار کھوڑو، منظور وسان ، میر ہزار خان بجرانی شامل ہیں۔سندھ کابینہ نے پولیس کی استعداد کار بڑھانے کا فیصلہ بھی کیا ہے اس موقع پر وزیر اعلیٰ سندھ کا کہنا تھا کہ شہرمیں ٹارگٹڈ آپریشن سے اچھے نتائج سامنے آئے ہیں اور پولیس کی استعداد کار بڑھانے کے لئے جتنے بھی فنڈز چاہیے ہوں گے وہ سندھ حکومت جاری کرے گی۔

سندھ رینجرز۔ اختیارات

مزید : صفحہ اول