سعودی کابینہ میں ردو بدل ،کئی داخلی پالیسیوں کا اعلان ،شاہی فرامین جاری

سعودی کابینہ میں ردو بدل ،کئی داخلی پالیسیوں کا اعلان ،شاہی فرامین جاری
 سعودی کابینہ میں ردو بدل ،کئی داخلی پالیسیوں کا اعلان ،شاہی فرامین جاری

  

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک)سعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے ہفتے کی شب بعض نئے فرامین جاری کیے ہیں۔ان کے تحت کابینہ میں ردو بدل کیا گیا ہے اور بعض داخلی پالیسیوں کا اعلان کیا گیا ہے۔

شاہی فرامین میں ایک کے تحت ملک میں نیشنل سکیورٹی سنٹر اور اختیار ات کے نا جائز استعمال کے الزامات کی تحقیقات کیلئے کمیٹی قائم کر دی گئی ہے جبکہ ایک اور فرمان کے تحت یمن میں حوثی باغیوں کیخلاف آپریشن فیصلہ کن طوفان میں حصہ لینے والے فوجیوں کو دو ماہ کی تنخواہیں ادا کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔شاہ سلمان نے ایک اور فرمان کے تحت سعودی عرب میں تمام سطحوں کے طلبہ کے امتحان رمضان المبارک کے آغاز سے قبل لینے کا حکم دیا ہے۔

شاہ سلمان نے نئے فرامین کے ذریعے کابینہ میں رد وبدل اور بعض عہدوں پر نئے تقرر کا بھی اعلان کیا ہے۔ شہزادہ خالد بن سلمان کو امریکا میں سعودی عرب کا سفیر مقرر کیا گیا ہے جبکہ شہزادہ عبدالعزیز بن سلمان کو توانائی سے متعلق امور کا وزیر مملکت اور شہزادہ فہد بن ترکی کو سعودی عرب کی بری فوج کا کمانڈر مقرر کیا گیا ہے۔سعودی فرمانروا نے وزیر اطلاعات اور ثقافت ڈاکٹر عادل الطریفی کو ان کے عہدے سے سبکدوش کر دیا ہے اور انکی جگہ ڈاکٹر عواد العواد کو وزارت اطلاعات اور ثقافت کا قلمدان سونپا ہے۔سپورٹس اتھارٹی کے سربراہ شہزادہ عبداللہ بن مسعد کو انکے عہدے سے ہٹا دیا گیا ہے اور ان کی جگہ محمد عبدالمالک الشیخ کو اتھارٹی کا نیا سربراہ مقرر کیا گیا ہے۔ سعودی وزیر مملکت سول سروس خالد العرج کو انکے عہدے سے برطرف کردیا گیا ہے اور ان کیخلاف تحقیقات کی ہدایت کی گئی ہے۔ ان کی جگہ عصام بن سعد بن سعید وزیر مملکت سول سروس ہوں گے۔

مزید : صفحہ اول /اہم خبریں