لوڈشیڈنگ امریکہ بھی جا پہنچی ، ملک کا بڑا حصہ سات گھنٹے بجلی سے محروم

لوڈشیڈنگ امریکہ بھی جا پہنچی ، ملک کا بڑا حصہ سات گھنٹے بجلی سے محروم

نیویارک(نیٹ نیوز /مانیٹرنگ ڈیسک) چند روز قبل امریکی خفیہ ایجنسی سی آئی اے کے ایک سابق ڈائریکٹر نے متنبہ کیا تھا کہ شمالی کوریا امریکہ کے نیشنل گرڈ کو تباہ کرکے ملک کو اندھیروں میں ڈبو سکتا ہے۔ جمعہ کوواقعی امریکہ کا ایک بڑا حصہ اچانک بجلی سے محروم ہو گیا اور اب امریکی شہری اس کا الزام روس اور شمالی کوریا کو دے رہے ہیں۔ بجلی کی بندش سات گھنٹے تک رہی۔ ڈیلی سٹارکے مطابق صبح 9بجے اچانک نیویارک اور کیلیفورنیا میں 90ہزار سے زائد گھروں اور دفاتر کی بجلی چلی گئی، جس نے امریکیوں کو خوف میں مبتلا کر دیا کیونکہ اس سے چند روز قبل سی آئی اے کے سابق سربراہ اس خدشے کا اظہار کر چکے تھے۔ بجلی کے اس تعطل میں سان فرانسسکو کی معروف کیبل کارز اور ٹریفک لائٹس بھی بند ہو گئیں، جس سے پورے شہر میں افراتفری مچ گئی۔روسی فوج بھی حرکت میں آگئی، ٹوئٹر پر ہزاروں امریکی اس خدشے کا اظہار کر رہے ہیں کہ یہ کوئی معمول کی بجلی کی بندش نہیں تھی۔ یہ کام شمالی کوریا یا روس کا ہوسکتا ہے۔ میٹ سٹاک نامی ایک صارف نے لکھا ہے کہ ’’بجلی کی بندش کا دائرہ پھیل رہا ہے اور اب تک کسی میڈیا ہاؤس نے اس کی خبر نہیں دی۔ یہ کوئی معمول کا واقعہ نہیں لگتا۔‘‘ جوئی بایرز نامی صارف کا کہنا تھا کہ ’’ سان فرانسسکو اور نیویارک کی اچانک بجلی بند ہونے سے ظاہر ہورہا ہے کہ شمالی کوریا یا روس نے ہم پر حملہ کر دیا ہے۔‘‘ رپورٹ کے مطابق معلوم ہوا ہے کہ سان فرانسسکو میں بجلی کی بندش ایک سب سٹیشن میں آتشزدگی کے باعث ہوئی تاہم آگ لگنے کی وجہ معلوم نہیں ہو سکی۔ ایف بی آئی کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ’’ہم تمام صورتحال کا جائزہ لے رہے ہیں۔‘‘ نیویارک میں بجلی کی بندش کی کوئی وجہ فی الحال سامنے نہیں آ سکی۔

مزید : صفحہ آخر