بوڑھے امریکی کی جان اٹک گئی لیکن پھر اسے بیوی نے ایسی بات بتائی کہ اسے پرسکون موت آگئی، دیکھ کرڈاکٹر بھی حیران رہ گئے

بوڑھے امریکی کی جان اٹک گئی لیکن پھر اسے بیوی نے ایسی بات بتائی کہ اسے پرسکون ...
بوڑھے امریکی کی جان اٹک گئی لیکن پھر اسے بیوی نے ایسی بات بتائی کہ اسے پرسکون موت آگئی، دیکھ کرڈاکٹر بھی حیران رہ گئے

  

نیویارک(نیوزڈیسک) ایک 75سالہ امریکی بزرگ کو صدر ڈانلڈ ٹرمپ سے اس قدر نفرت تھی کہ وہ اسے صدارت کے عہدے پر بالکل بھی پسند نہیں کرتا تھااور جب اسے ایک جھوٹی اطلاع دی گئی کہ ٹرمپ کا مواخذہ شروع ہوگیا ہے تو اسے موت آگئی۔تفصیلات کے مطابق امریکی ریاست اوریگون کا رہائشی مائیکل ایلیٹ شدید بیماری میں مبتلا تھا اور6اپریل کو اس کی سابقہ بیوی ٹیریسا ایلیٹ کو بلایا گیااور اس نے مرتے ہوئے بوڑھے سے جھوٹ بولا کہ صدر ٹرمپ کا مواخذہ شروع ہوگیا ہے۔”مجھے معلوم تھا کہ میں جھوٹ بول رہی ہوں لیکن میرے اس جھوٹ سے مائیکل کو بہت سکون ملا اور اس نے اپنی زندگی کی آخری سانس لی اور مرگیا۔“اس کا کہنا ہے کہ مائیکل خبروں کا رسیا تھا اور اسے ٹرمپ سے شدید نفرت تھی ۔کچھ عرصے سے اس کی طبیعت شدید خراب تھی اور جب اسے ٹرمپ کے بارے میں جھوٹی خبر دی گئی تو اس نے سکھ کا سانس لیا اور اس کے دم نکلے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس