کراچی میں بجلی بحران کی ذمہ دار کے الیکٹرک ، بلاول ہاؤس اور بنی گالا ہم پیالہ ہم نوالہ ، عوام دھوکے میں نہ آئیں : شہباز شریف

کراچی میں بجلی بحران کی ذمہ دار کے الیکٹرک ، بلاول ہاؤس اور بنی گالا ہم پیالہ ...

  

کراچی( سٹاف رپورٹر ) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کا کہنا ہے کراچی کے بجلی بحران میں سب سے زیادہ قصور 'کے الیکٹرک' کا ہے ۔ و ز یر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے متحدہ قومی موومنٹ پاکستان (بہادر آباد) کے رہنماؤں سے ملاقات کی جس میں ملکی و صوبائی سیاسی صورتحال اور شہر کے حوالے سے بات چیت کی گئی ۔ ملاقات کے بعد مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران شہباز شریف نے کہا کہ کراچی کے بجلی بحران میں سب سے زیادہ قصور کے الیکٹرک کا ہے کیوں کہ 2 پلانٹ طویل عرصے سے بند ر کھے ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ 2011 میں سی سی آئی میں فیصلہ ہوا تھا کہ کے الیکٹرک دو پلانٹ چلائے گی جس سے شہر کو 500 میگا واٹ بجلی ملے گی لیکن کے الیکٹرک واپڈا سے سستی بجلی لیتی رہی تاکہ خود بجلی نہ بنانا پڑے۔ان کا کہنا تھا کہ کے الیکٹرک کو پلانٹس چلانے کا پابند بنانا ہے جب کہ کل وزیراعظم خود یہاں آئیں گے، رمضان المبارک میں شہر کو بلا تاخیر بجلی ملنی چاہیے۔شہباز شریف کا کہنا تھا کہ کراچی گیٹ وے آف پاکستان ہے، عروس البلاد شہر پر کھربوں روپے لگے وہ کہاں گئے؟ انہوں نے کہا کہ 2013 میں نوازشریف نے فیصلہ کیا کہ کراچی کی روشنیاں بحال کی جائیں، رینجرز نے آزادی سے آپریشن کیا جس سے آج کراچی کا امن واپس لوٹ آیا ہے اور 80 فیصد بھتا خوری ختم ہوگئی ہے۔ وز یر ا علیٰ پنجاب اور مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے کہا ہے کہ موقع ملا تو کراچی کو نیویارک بنادیں گے۔پنجاب کے وزیراعلیٰ اور پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شر یف 2 روزہ دورے پر کراچی پہنچے جہاں انہوں نے مختلف سیاسی رہنماؤں سے ملاقاتیں کیں۔ اس موقع پر شہباز شریف کا کہنا تھا کہ موقع ملا تو کراچی کو نیویارک بنادیں گے جبکہ میں یہاں سیاسی پوائنٹ اسکورنگ کرنے نہیں آیا۔شہباز شریف نے عوامی نیشنل پارٹی کے مرکز مرادن ہاؤس کا دورہ کیا اور اے این پی رہنماؤں سے ملاقاتیں کیں جس کے بعد شہباز شریف ایم کیو ایم پاکستان کے بہادرآباد دفتر پہنچے اور کنوینر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی سے بھی ملاقات کی۔انہوں نے کہا کہ بہادر آباد میں ہونے والی ملاقات انتہائی مفید رہی اور اس میں ایم کیو ایم رہنماؤں کے ساتھ ترقیاتی منصوبوں پر بات چیت ہوئی۔ کراچی میں لوڈشیڈنگ کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ اس میں کے الیکٹرک قصور وار ہے۔ شہباز شریف نے کہا کہ رینجرز کی آمد کے بعد کراچی میں امن قائم ہوا ،جرائم اور بھتہ خوری کی تعداد میں کمی ہوئی، یہ وہ شہر ہے جس نے ماں کی طرح دوسرے شہروں سے آنے والوں کو اپنی آغوش میں لیا ، آج ضرورت ہے کہ لوگوں کو معاشی انصاف فراہم کیا جائے۔ بعدازاں شہباز شریف ایم کیو ایم بہادرآباد کے مرکز گئے اور رہنماؤں سے ملے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ کراچی میں لگائے فنڈز اور اربوں روپے کہاں گئے، یہاں ہر طرف گندگی کے ڈھیر ہیں اور سڑکیں کھدی ہوئی ہیںِ، نہ جانے کراچی کو کس کی نظر لگ گئی، اس شہر اور کروڑوں کی آبادی کے ساتھ یہ بہت بڑا ظلم اور زیادتی ہے، لوڈ شیڈنگ میں زیادہ قصور وار کے الیکٹرک ہے، اس نے ڈھائی ڈھائی سو میگاواٹ کے پراجیکٹ نہیں چلائے اور واپڈا سے سستی بجلی لیتی رہی، کے الیکٹرک کو بجلی کی فراہمی کا پابند بنانا ہوگا۔ ایم کیو ایم پاکستان (بہادر ا?باد) کے رہنما خالد مقبول صدیقی نے اس موقع پر بات کرتے ہوئے کہا کہ شہباز شریف سے ملاقات صرف فوٹو سیشن نہیں تھا بلکہ ہم نے شہر کے مسائل سے انہیں آگاہ کیا اور اپنے دکھ بیان کیے ہیں۔انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے شہری علاقوں کے ساتھ جو کیا ہے سب کے سامنے ہے جب کہ ہم نے ملاقات میں یہ بھی بتایا کہ اس شہر کو عالمی سطح پر بھی تسلیم کیا جاتا ہے لیکن ڈھائی سے 3 کروڑ آبادی والے شہر کی آبادی کو دانستہ طور پر مردم شماری میں کم دکھایا گیا ہے۔ اس سے قبل شہباز شریف ایم کیو ایم (بہادر آباد) کے رہنماؤں سے ملاقات کے لیے بہادر آباد پہنچے تو کارکنوں کی جانب سے پھولوں کی پتیاں نچھاور کی گئیں اور خالد مقبول صدیقی اور دیگر رہنماؤں نے ان کا استقبال کیا۔اس سے قبل اے این پی راہنماؤں کے ہمراہ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ ( ن ) کے مرکزی صدر اوروزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے کہا کہ کراچی عروس البلا اور روشنیوں کا شہر تھا جس کو ماضی میں دہشت اور خوف کی علامت بنایا گیا۔ ہم کراچی کے کھوئے ہوئے اس مقام کو دلانا چاہتے ہیں ۔جس کے لئے ہم سب کو ذاتی آنا سے ہٹ کر متحد ہونا ہوگا۔ہم پاکستان کی ترقی کے لئے سب کو ساتھ لیکر چلیں گے ۔محبت اور امن سے سب کو جوڑنا ہے جبکہ عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے صدر شاہی سید نے کہا ہے کہ گذشتہ 30 برسوں میں کراچی نے بہت زخم کھائے ہیں ۔کراچی ملکی معیشت کا حب ہے ۔ہمیں ملکر اس شہر کی ترقی کے لئے چلنا ہوگا۔ آج کی ہماری ملاقات کا مقصد پاکستان کی مضبوطی اور کراچی کی روشنیاں ہیں ۔پاکستان عدلیہ ،فوج اور پارلیمنٹ سمیت سب کا ہیتاہم پارلیمنٹ بالادست ہے اور پارلیمان میں بیٹھے لوگ ملکر اس کا احترام کرائیں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کو عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے صدر شاہی سید کی رہائش گاہ پر شہباز شریف کے اعزاز میں دئیے ظہرانے کے موقع پر خطاب اور صحافیوں سے گفتگو کے دوران کیا۔ اس موقع پر مسلم لیگ (ن ) کے مرکزی رہنماء مشاہد حسین سید ، گور نر سندھ محمد زبیر، مسلم لیگ ( ن ) کے رہنماء خواجہ طارق نذیر،امان آفریدی ،عوامی نیشنل پارٹی سندھ کے سیکر یٹری جنرل یونس بونیری اور دیگر بھی موجود تھے۔شہباز شریف نے ظہرانے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کراچی پاکستان کا چہرہ ،قائد اعظم کا عظیم شہر ہے ۔ہم نے اسے دوبارہ قائد اعظم کا حقیقی شہر بنانا ہے۔نواز شریف نے اپنے دور میں اداروں کے تعاون سے دہشت گردی اور ٹارگٹ کلنگ کا کسی حد تک خاتمہ کیا ہے ۔میں اس بات کا یقین دلاتا ہوں کہ کراچی کی ترقی اور اس کی روشنیوں کی بحالی کے لئے مسلم لیگ ( ن ) سب کے ساتھ ہاتھ سے ہاتھ ملا کر چلنے کے لئے تیار ہے۔ انہوں نے عوامی نیشنل پارٹی کی قیادت کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ملکی استحکام اور ترقی کے لئے آپ کے ساتھ ہیں اور ہم آپس میں ہاتھ سے ہاتھ ملاکر پاکستان کو ترقی کی طرف گامزن کریں گے اس ملک کی تعمیر نو اور اس کے مسائل کو حل کرنا ہم سب کا فرض ہے ۔انہوں نے کہا کہ شہر قائد کی روشنیاں ایک مرتبہ پھر ہم نے لوٹانی ہیں کیوں کہ یہ ملکی معیشت کا حب ہے ۔کراچی کو ہم نے حقیقی معنوں میں روشنیوں کا شہر بنانا ہے ۔اس کے لئے ذاتی انا کو ایک طرف رکھ کر ہم سب کو ملکر چلنا ہوگا۔ ہمارا اتحا د ہی اس شہر کو ترقی کی طرف گامزن کرے گا۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ آج میں اے این پی کی قیادت کا مشکور ہوں کے انہوں نے ملاقات کی دعوت دی اور ہم یہاں پر اظہار یکجتی کے لئے آئے ہیں ہم سب ملکر چلیں گے گئے تو ملک ترقی کرے گا۔ہم کراچی کو ترقی کی طرف گامزن کرنا چاہتے ہیں ۔ہمارا مقصد ملک کی ترقی اور خوشحالی ہے ۔شہباز شریف نے کہا کہ گزشتہ پانچ سال میں ملک خوشحالی اور ترقی کی طرف بڑھا ہے ۔قبل ازیں شاہی سید نے ظہرانے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہباز شریف کو حقیقی قوم پرست سمجھتا ہوں انہوں نے اپنے صوبے میں کام کر کے دیکھایا ہے۔ گزشتہ 30 سال میں کراچی نے بہت زخم کھائے ہیں ہم ایک مرتبہ پھر اس شہر کو روشنیوں کا شہر بنانا چاہتے ہیں ا ور سب کو ساتھ لیکر چلنا چاہتے ہیں ماضی میں جو کچھ ہوا اس کا سب سے زیادہ نقصان ارودو بولنے والوں کو ہوا ہے ۔انہوں نے تمام سیاسی اور مذہبی قوتوں کو دعوت دی ہے کہ وہ آئین ملکر پاکستان اور اشہر کی ترقی کے لئے ملکر کام کریں پاکستان سب کا ہے ۔عدلیہ کا بھی ،فوج بھی اور پارلیمنٹ کا بھی ہے لیکن پارلیمنٹ بالادست ہے ۔میں موجود لوگوں سے کہتاہوں کہ وہ پارلیمنٹ کو احترام دلائیں ۔ صحافیوں سے گفتگو میں شاہی سید نے کہا کہ پاکستان مضبوط ہوگا تو کراچی میں خوشحالی ہوگی کراچی میں خوشحالی ہوگی تو پورا ملک خوشحال ہوگا۔ ہم اس ملک کی ترقی کے لئے سب کے ساتھ چلنے کو تیار ہیں۔شہباز شریف نے سراج الحق کی جانب سے سینٹ انتخابات میں اوپر کی مداخلت کے حوالے سے پوچھے گئے سول کے جواب میں کہا کہ یہ بات سراج الحق نے کی ہے اس کا جواب پرویز خٹک ہی بہتر انداز میں دیں گے۔شہباز شریف نے صحافیوں کے مزید سوال لینے سے گریز کیا اسی طرح ملک کے دیگر سیاسی ایشو ز کے حوالے سے بھی کوئی گفتگو نہیں کی۔دریں اثنا پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور پنجاب کے وزیر اعلیٰ شہباز شریف کا کہنا ہے کہ بلاول ہاؤس اور بنی گالا ہم نوالہ و ہم پیالہ ہیں، لوگ ان کے دھوکے میں نہ آئیں۔ن لیگ کے صدر شہباز شریف نے دورہ کراچی کے موقع پر لیاری میں خطاب کیا جس میں انہوں نے سیاسی مخالفین پر خوب تنقید کی۔شہباز شریف نے کہا کہ اگلے انتخابات میں موقع ملا تو کراچی کو نیو یارک بنا دیں گے ، ایک میٹرو نہیں کئی میٹرو لائیں گے، اورنج ،یلو، بلیو لائن سب لائیں گے۔شہباز شریف نے یہ بھی کہا کہ وہ پشاور جاتے ہیں تو تحریک انصاف اور سندھ جاتے ہیں تو پیپلز پارٹی ناراض ہوجاتی ہے، آئینہ ان کو دکھایا تو برا مان گئے۔انہوں نے کہا کہ کراچی کی یہی حالت رہی تو پاکستان کی حالت نہیں بدلے گی۔پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر اور وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے کراچی میں بجلی بحران کا ذمہ دار کے الیکٹرک کو قرار دے دیا۔شہباز شریف 2 روزہ دورے پر کراچی میں موجود ہیں جہاں انہوں نے مختلف سیاسی رہنماؤں سے ملاقاتیں کیں۔ لیاری میں پارٹی کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا کہ نواز شریف نے عزم کیا تھا کہ کراچی میں امن لاؤں گا اور امن لوٹ آیا، رینجرز کو ذمے داری دی گئی اور انہوں نے محنت سے کام کیا۔

شہباز شریف

مزید :

صفحہ اول -