پی ٹی آئی کی ایم پی اے خاتون بی بی کا قرآن پر حلف ، ووٹ بیچنے کاالزام مسترد

پی ٹی آئی کی ایم پی اے خاتون بی بی کا قرآن پر حلف ، ووٹ بیچنے کاالزام مسترد

  

صوابی (این این آئی)پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کی جانب سے سینیٹ الیکشن میں ووٹ بیجنے کے الزامات کے جواب میں صوابی کی ایم پی اے خاتون بی بی نے قرآن پاک پر حلف لیتے ہوئے اپنے اوپر تمام الزامات مسترد کردئیے اور کہا ہے پارٹی قائدعمران خان کو یہ تک پتہ نہیں کہ کون ان کا ایم پی اے ہے اور کون نہیں،بابرسلیم کا تعلق مسلم لیگ ن سے ٗ معراج ہمایوں کا تعلق قومی وطن پارٹی سے ہے ٗ عمران خان کی جانب سے دونوں کو شوکاز نوٹس جاری کرنا سمجھ سے بالاتر ہے، پارٹی کی طرف سے شوکاز نوٹس ملا ہے جس کا تفصیلی جواب دونگی، عمران خان اپنے الزامات واپس لے ورنہ اس کے خلاف عدالت سے رجوع کرینگے۔اتوار کو اپنی رہائش گاہ پر پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایم پی اے خاتون بی بی نے کہا کہ میں نے تحریک انصاف کے نامزدکردہ سینٹ امیدواران کو ووٹ دیا ہے ،مجھ پر کسی سازش کے تحت الزام لگایا گیا ہے ،مجھ پر بغیر کسی ثبوت کے ہارس ٹریڈنگ کا الزام لگا کر مجھ سمیت صوابی عوام کی توہین کی گئی ہے جبکہ ہمارے پینل میں تمام معزز صوبائی اسمبلی کے ممبران نے فدا خان کووٹ دیا ہے۔ پرویز خٹک نے جس نامزد امیدواران کو ووٹ دینے کا کہاتھا اسی نامزد امیدواران کو ووٹ کاسٹ کیا ہے جبکہ ووٹ دینے سے قبل بھی ہمارے پینل کے 12ایم پی ایز نے تسلی دی تھی اور ہمارے نامزد کردہ سینیٹر فدا خان کو پورے12ووٹ پڑے ہیں اس بات کا گواہ شہرام خان ترکئی ہے، عوامی جمہوری اتحاد کی پلیٹ فارم سے ایم پی اے بنی ہوں اور جب ہمارے پارٹی چیئرمین شہرام خان نے پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کی تو ان کے ساتھ تحریک انصاف میں شامل ہوئیں ،میں نے پی کے31میں ریکارڈ ترقیاتی کام کئے اور جو فنڈز مجھے ملا ہے اسی حلقہ میں لگا یا نہ اس وقت کرپشن کی ہے اور میں اللہ تعالیٰ کو حاضر و ناظر جان کر قرآن پاک پر ہاتھ رکھ حلف اٹھاتی ہوں کہ میں نے سینیٹ الیکشن میں ووٹ فروخت نہیں کیا ہمارا خاندان کئی عشروں سے سیاست کے میدان میں ہیں اور مجھے اپنے بڑوں سے گلہ ہے کہ میں نے ان کے کہنے اور بتائے ہوئے امیدواروں کوووٹ دیا

مزید :

صفحہ آخر -