طور خم این ایل سی حکام کیخلاف شنواری قوم اور سیاسی اتحاد کا مشترکہ احتجاجی مظاہرہ

طور خم این ایل سی حکام کیخلاف شنواری قوم اور سیاسی اتحاد کا مشترکہ احتجاجی ...

  

خیبر ایجنسی (بیوروپورٹ)لنڈیکوتل بازار باچاخان چوک میں طورخم این ایل سی حکام کے خلاف شنواری قوم اور سیاسی اتحاد کا مشترکہ احتجاجی مظاہرہ کیا گیا مظاہرین کالے جھنڈے اٹھا رکھے تھے اور این ایل سی کے خلاف شدید نعرہ بازی کر رہے تھے مظاہرین نے باچا خان چوک سے پریس کلب تک احتجاجی واک بھی کیا احتجاجی مظاہرین سے خطاب کر تے ہوئے جمعیت علماء اسلام (ف)فاٹاجنرل سیکرٹری مفتی اعجاز شنواری پاکستان پیپلز پارٹی کے صدر حضرت ولی آفریدی پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء عبدلرازق شنواری ،پاکستان جسٹس ڈیموکریٹک صدر دولت شاہ آفریدی ،زرقیب شنواری ،زکریا شنواری لطف اللہ اور دیگر نے کہا کہ طورخم میں این ایل سی معاہدے کی خلاف ورزی کر رہے ہیں 2015میں جو معاہدہ قوم کے ساتھ کیا گیا تھا وہ سب کو منظور ہیں اس کے بعد کسی معاہدے کو قوم تسلیم نہیں کر تے انہوں نے کہا این ایل سی نے طورخم میں سینکڑوں کنال قومی ارضی پر قبضہ کیا ہوا ہے اور وہ طورخم میں اختیارات سے تجا وز کر رہے ہیں جب سے طورخم میں این ایل سی آئی ہیں مقامی لوگوں کا روبار تباہ ہو گیا ہے انہوں نے کہا کہ چند عمائدین کی این ایل سی کے ساتھ معاہدہ قوم کو منظور نہیں ہیں این ایل سی حکام اراضی مالکان سے مذاکرات کریں مقررین نے کہا کہ اگر انکے مطالبات آئندہ اتوار تک تسلیم نہیں کئے گئے اور انکے ساتھ مذاکرات نہیں کئے گئے توہ پاک افغان شاہراہ کو ہر قسم آمدورفت کیلئے بند کر دینگے اور احتجاجی تحریک شروع کرکے پشاور گورنر ہاوس کو رکمانڈر دفتر کے سامنے احتجاجی دھرنا دینگے جبکہ اس سلسلے میں این ایل سی کے منیجر فضل واحد نے موقف اختیار کرتے ہوئے کہا کہ این ایل سی حکام کا خوگہ خیل قوم مشران کے ساتھ معاہدہ ہو چکا ہیں اور اسے سررکاری معاہدے پر کاربند ہیں قومی مشران نے جو معاہدے کے تحت جو اراضی دی ہے اس پر تعمیراتی کا م جا ری ہیں

مزید :

کراچی صفحہ اول -