بونیر ،پیر بابا مزار کے مکینوں کا مالکانہ حقوق کیلئے احتجاجی مظاہرہ

بونیر ،پیر بابا مزار کے مکینوں کا مالکانہ حقوق کیلئے احتجاجی مظاہرہ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


بونیر(ڈسٹرکٹ رپورٹر)پیر با با مزار کے سائے میں پہاڑی سلسلوں میں آباد مکینوں کا سینکڑوں سالوں سے پشت درپشت جائیدادوں پر مالکانہ حقوق کے لیے بڑا جرگہ اور مظاہرہ۔مطالبات کے حق میں نعرہ بازی ۔وزیر اعلیٰ سے مالکانہ حقوق بل پر فوری دستخط کا مطالبہ ۔25تا30 اپریل وزیر اعلیٰ ھاوس کے سامنے ہزاروں کی تعداد میں دھرنا دینے کا اعلان ۔مطالبات کی منظوری تک دھرنا جاری رکھنے کے عزم کا اظہار۔جرگہ سے کاشتکاران کمیٹی ملاکنڈ ڈویژن کے جنرل سیکریٹری ماسٹر خان زمان آف مٹہ سوات،سینیر نائب صدر گل رحمان آف بریکوٹ سوات،سابق چیئر مین ڈسٹرکٹ کونسل بونیر محمد خان،پیر محمد اور محمد یونس آف بیکن بونیر کا خطاب۔جرگہ سے خطاب اور میڈیا سے گفتگوں کرتے ہوئے جنرل سیکریٹری نے کہا کہ ملاکنڈ ڈویژن،ہزارہ ڈویژن اور انڈس کوہستان کے پہاڑی سلسلوں میں سینکڑوں سالوں سے پشت درپشت آباد مالکان جائیداد کو پٹواریوں نے سازش کے تحت حق جائیداد سے محروم کرکے محکمہ جنگلات کو مالکانہ حقو ق دے رکھے ہیں جو کہ سراسر نا انصافی ہے اور متاثرہ لاکھوں مالکان جائیداد نے ہر صورت اپنے حقوق کی دفاع کا فیصلہ کیا ہے ۔اور انکی جدوجہد سے صوبائی اسمبلی میں مالکان حقوق کی بل بھی پاس ہوچکی ہے لیکن وزیر اعلیٰ اس پر دستخط نہیں کرتا اور یوں لاکھوں کی تعداد میں متاثرین نے فیصلہ کیا ہے کہ تمام اضلاع میں جرگہ منعقد کرکے متاثرین کو وزیر اعلیٰ ہاوس کے سامنے بھر پور احتجاجی دھرنا دینے کے لیے تیار کیا جارہاہے اور مطالبہ کے منظوری تک دھرنا دینے کے لیے تمام تر تیاری کی جارہی ہیت ۔انھوں نے وزیر اعلیٰ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ متاثرین کو سڑکوں پر آنے سے قبل دستحط کرکے انکے اُن کے مالبات تسلیم کر لیں۔