تحریک انصاف کے شوکاز پر حیرت ہوئی ،بابر سلیم

تحریک انصاف کے شوکاز پر حیرت ہوئی ،بابر سلیم

  

ٹوپی(تحصیل رپورٹر)پاکستان مسلم لیگ ن کے صوبائی اسمبلی کے رکن بابر سلیم خان پاکستان تحریک انصاف کی جانب سے ان کو شوکاز نوٹس بھیجنے پر حیرت کا اظہار عمران خان کو یہ تک پتہ نہیں کہ خیبر پختون خوا اسمبلی میں انکے پارٹی کے ممبران کو ن کون ہیں میں جب تحریک انصاف کا ممبر نہیں تو مجھ کو شوکاز نوٹس بھیجنے کی کیا تک بنتی ہے سینٹ الیکشن سے ایک ماہ قبل پاکستان مسلم لیگ میں شمولیت اختیار کی ہے میں نے اپنے پارٹی کے نامزدکردہ امیدواروں کووٹ دیا ہے باز پرس کا حق میرے پارٹی قائدین کو ہے عمران کی لاعلمی اور سستی شہرت پانے کیلئے میری سیاسی دامن پر داغ لگانے پر عدالت میں دعویٰ دائر کریں گے ان خیالات کا اظہار پاکستان مسلم لیگ ن کے ایم پی اے بابر سلیم نے تحریک انصاف کی طرف سے شوکاز نوٹس ملنے پر میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ 2013الیکشن عوامی جمہوری اتحاد کی پلیٹ فارم سے لڑا تھا حلقہ میں ترقیاتی فنڈز کی بندش پر پارٹی قیادت سے اختلاف رہا بعد میں شہرام خان نے پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کی میں نے ساتھ نہیں دیا اور بدستور عوامی جمہوری اتحاد کا رکن رہا 4اپریل پشاور میں پاکستان مسلم لیگ کے تاریخی جلسہ میں نواز شریف نے پارٹی ٹوپی پہنائی اور مارچ میں سینٹ الیکشن کے دوران پارٹی کی طرف سے نامزدکردہ امیدوران پیر صابر شاہ اور حاجی دلاور خان کو ووٹ دیا اور دونون سنیٹرز نے میرے دیرے پر آکر ووٹ دینے پر شکریہ ادا کیا انہوں نے کہ شہرام خان ترکئی اور سپیکر اسد قیصر حلقہ میں میری مقبولیت سے خائف ہیں تو عمران خان کے زریعے سازش کی انہوں نے واضح کیا کہ گزشتہ سینٹ الیکشن کے دوران بھی پی ٹی آئی کے لیاقت ترکئی کو ووٹ نہیں دیا تھا اور بعد میں پرویز خٹک کی زاتی درخواست پر سراج الحق اور جاوید عباسی کو ووٹ دیا انہوں نے سپیکر اسد قیصر اور شہرام خان کو سیاسی بونے قرارد یا اور کہا کہ 2018کے الیکشن میں جھوٹے پروپیگنڈنے نہیں چلے گی کارکزدگی کی بنیاد پر عوام الیکشن میں ووٹ دیں گے اور میرے حلقہ کے ہر فرد مجھ سے میری خدمات سے واقف ہیں عمران خان اپنے پی ٹی آئی ممبران کو شوکاز دیں اور خود کو پنجاب میں مقبول بنانے کیلئے جھوٹے اور لاحاصل پروپیگنڈوں سے گریز کریں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -