سربراہ دختران ملت آسیہ اندرابی 4ساتھیوں سمیت 8روزہ عدالتی ریمانڈ پر سنٹرل جیل منتقل

سربراہ دختران ملت آسیہ اندرابی 4ساتھیوں سمیت 8روزہ عدالتی ریمانڈ پر سنٹرل ...

  

سرینگر(نیوز ایجنسیاں)مقبوضہ کشمیر میں کٹھ پتلی انتظامیہ نے دختران ملت کی سربراہ آسیہ اندرابی کو اپنے چار ساتھیوں کے ہمراہ 8روزہ عدالتی ریمانڈ پر سینٹرل جیل سرینگر منتقل کردیا ہے۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق آسیہ اندرابی کو اپنے چار کارکنان کے ہمراہ گزشتہ رات ایک چھاپے کے دوران ضلع اسلام آباد کے علاقے آنچی ڈورہ سے گرفتارکیا گیا تھا۔گرفتار ساتھیوں میں ناہیدہ نسرین اور فہمیدہ صوفی شامل ہیں۔بھارتی پولیس کے ایک افسر نے دعویٰ کیا ہے کہ آسیہ اندرابی اور ان کی ساتھیوں کو قصبے میں طالبات کے احتجاج میں ان کے مبینہ کردار پرگرفتارکیا گیا ہے اور اس سلسلے میں ان کے خلاف ایک کیس بھی درج کردیاگیا ہے۔ دریں اثناء کشمیر تحریک خواتین کی چےئر پرسن زمرودہ حبیب اور جنرل سیکرٹری شمیم شال نے بھی ایک بیان میںآسیہ اندرابی اور ان کی ساتھی کارکنان کی غیر قانونی نظربندی کی شدید مذمت کی ہے۔ ادھر مقبوضہ کشمیر میں ضلع کٹھوعہ میں کمسن بچی آصفہ کی آبروریزی اور قتل کے خلاف لال چوک میں تاجروں نے ایک گھنٹے تک علامتی ہڑتال کی اورپرامن احتجاجی دھرنا دیا جبکہ مائسمہ میں لوگوں نے واقعے کی تحقیقات جلد از جلد مکمل کرنے کا مطالبہ کیاہے۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق لال چوک ، ریذیڈنسی روڑ، پولوویو، لیمبرٹ لین، بنڈ اور ریگل چوک کے دکانداروں نے ایک گھنٹے تک تجارتی سرگرمیاں معطل کردیں۔ ریگل چوک ٹریڈرس ایسوسی ایشن سے وابستہ تاجروں کی ایک بڑی تعداد نے 3سے 4بجے تک ایک پرامن احتجاجی دھرنادیا۔انہوں نے کٹھوعہ معاملے کی تحقیقات جلد سے جلد مکمل کرنے پر زور دیتے ہوئے مجرموں کو قرار واقعی سزا دینے کا مطالبہ کیا۔ادھر سرینگر کے علاقے نوہٹہ میں بھی تاجروں نے کٹھوعہ واقعے کے خلاف احتجاجی ریلی نکالی۔ مائسمہ میں لوگوں نے شام کے وقت موم بتیاں جلا کر کٹھوعہ کی ننھی پری کے اہلخانہ سے یکجہتی کا مظاہرہ کیا۔دوسری طرف مقبوضہ کشمیر میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے چےئرمین سید علی گیلانی نے قابض انتظامیہ کی طرف سے کشمیری نوجوانوں کو فرضی الزامات میں گرفتار کرکے پولیس تھانوں اور انٹروگیشن سینٹروں میں جسمانی تشدد کا نشانہ بنانے اور علاقے میں خوف ودہشت کا ماحول پیدا کرنے کی شدید مذمت کی ہے۔کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق سید علی گیلانی نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ بعض پولیس افسر اپنے آقاؤں کو خوش کرنے کے لیے اپنے ہی عوام کو ظلم وبربریت کا نشانہ بنارہے ہیں۔حریت چےئرمین نے طلباء اور نوجوانوں کی وسیع پیمانے پر گرفتاریوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ دانشمندی اسی میں ہے کہ نوجوان نسل کو پشت بہ دیوار نہ کیا جائے اور ان کے صبر کا امتحان نہ لیا جائے۔ انہوں نے بھارتی تحقیقاتی ادارے این آئی اے کی طرف سے حز ب المجاہدین کے سربراہ سید صلاح الدین کے فرزند شاہد یوسف کے خلاف من گھڑت چارج شیٹ دائر کئے جانے پر اظہارِ افسوس اور اسکی شدید مذمت کی ہے ۔ تقریب میں حریت رہنماؤں اور کارکنوں کی بڑی تعدادبشمول محمد یٰسین عطائی، بشیر احمد بٹ، تعشوق احمد بانڈے، مدثر ندوی، امتیاز حیدر اور حبیب اللہ ا یتو نے بھی شرکت کی۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -