سندھ میں جان بوجھ کر لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے،نثار کھوڑو

سندھ میں جان بوجھ کر لوڈشیڈنگ کی جارہی ہے،نثار کھوڑو

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) پیپلز پارٹی سندھ کے صدر نثار احمد کھوڑو نے کہا ہے کہ سندھ میں جان بوجھ کر لوڈشیڈنگ کی جاتی ہے۔میدان عمل میں رہتے ہوئے ہم چیلنجر کا سامنا کر رہے ہیں۔شہباز شریف نے لوڈشیڈنگ کے حوالے سے نام تبدیل کرنے کا کہا تھالیکن ابھی تک نہیں کیا۔نہ مریم نواز نے اپنے باپ کا ساتھ نبھایا نہ بھائی نے انہیں سمجھایا۔اب نواز لیگ شین لیگ بن گئی ہے۔ جی ڈی اے گلی ڈنڈا الائنس عوام کے لیے نہیں بلکہ اپنے لیے بار دانا مانگ رہے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے بلاول ہاؤس میڈیا سیل میں صوبائی وزیر اور کراچی ڈویژن کے صدر سعید غنی سمیت دیگر کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر پیپلز پارٹی میں اداکار ساجد حسن اور ان کی اہلیہ، ساجد حسن کے بھائی اور دیگر نے شمولیت کا اعلان کیا۔ نثار احمد کھوڑو نے کہا کہ بلاول بھٹو کی جدوجہد بہت طویل ہے۔میدان عمل میں رہتے ہوئے ہم چیلنجر کا سامنا کر رہے ہیں۔انہوں نے شہباز شریف کے متعلق کہا کہ آج کراچی آنے والا شخص اپنا نام تبدیل نہیں کررہا ہے۔بس تبدیلی یہ کی کہ بھائی کا نام نکال دیا۔شہباز شریف نے لوڈشیڈنگ کے حوالے سے نام تبدیل کرنے کا کہا تھا۔شہباز شریف نے کہا تھا چھے ماہ میں لوڈشیڈنگ ختم کریں گے۔بجلی نہ ہونے سے پانی نہیں انڈسٹری تباہ ہے۔چھٹی کے دن یہاں آنے کا شکریہ۔ساجد حسن اور دیگر لوگوں کو پارٹی میں شمولیت پر مبارک باد کہتا ہوں۔یہ لوگ بھی اب ہماری جدوجہد میں ہمارے ساتھ ہیں۔نثار کھوڑو نے کہا کہ سندھ میں جان بوجھ کر لوڈشیڈنگ کی جاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ بلاول بھٹو کی جدوجہد میں نئے لوگ شامل ہو رہے ہیں۔خوش قسمتی ہے پیپلز پارٹی میدان عمل میں ہے۔ہم نے بی بی کو چیئرپرسن رکھا تھا اور اپنی ذیلی تنظیم پیپلز پارٹی پارلیمنٹرین بنالی۔نہ مریم نے باپ کا ساتھ نبھایا نہ بھائی نے سمجھایا۔اب نواز لیگ شین لیگ بن گئی۔سندھ سے لوڈشیڈنگ ختم نہیں کی۔جان بوجھ کر لوڈشیڈنگ کی جاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ لوڈشیڈنگ ختم کرنا واپڈا کی ذمہ داری ہے۔مشرف اور ان کے ساتھیوں تھرکول کا نہیں سوچا ۔پیپلز پارٹی پاور پلانٹ لگا رہی ہے جو آگے چل کر پانچ ہزار میگاواٹ بجلی پیدا کرسکتا ہے۔نواز شریف نے نہیں لگایا۔ہم نے ونڈز پاور لگائے ہیں۔جام شورو میں بجلی کراچی آتی ہے سندھ کو نہیں ملتی ہے۔لوڈشیڈنگ کے حوالے سے پیپلز پارٹی کی کوئی ذمہ داری نہیں ہے ۔تھر کول میں بھی ہمارے آنے کے بعد ہی کام شروع کیا گیا تھا۔ نثار کھوڑونے کہا کہ جی ڈی اے گلی ڈنڈا الائنس عوام کے لیے نہیں بلکہ اپنے لیے بار دانا مانگ رہے ہیں۔سیڑھی پر بیٹھ کر مظاہرہ کرنے والے بتائیں ایک ایکڑ زمین بھی ہے۔دستاویزات دکھائی اور پہلے آئیے کی بنیاد پر بار دانا لے جائیں۔چودہ لاکھ ٹن خریدتے ہیں۔پچاس سینٹر بنائے ہیں تاکہ پہنچ آسان ہوجائے۔دو لاکھ اضاافہ کیا تھا ۔انہوں نے کہا کہ گلی ڈنڈا الائنس کے زمانے میں گندم کی رقم ساڑھے پانچ سو روپے من تھی اب تیرہ سو روپے من ہے۔چودہ لاکھ خریدنے سے ایک سو ارب روپے کا قرض لینا پڑتا ہے جو سود کے ساتھ ادا کرنا ہوتا ہے۔ادکار ساجد حسن نے کہا کہ ہم سب لوگوں کے بہت شکر گزار ہیں۔بے نظیر بھٹو کا بہت بڑا فین ہوں۔بلاول بھٹو سے بہت سی امیدیں ہیں،نمایاں بھی ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستانی قوم کو کوئی چیز آگے لے جاسکتی ہے وہ لبرل پروگریسو فلسفہ ہے۔جس میں منارٹیز کا خیال رکھا جاتا ہے۔کوئی نوجوان لیڈر جو پاکستان کو آگے لے جا سکتا وہ بلاول ہے۔ہمیں اس طرح کے نوجوانوں کی ضرورت ہے۔اگر اب کوئی نوجوان لیڈر ہے تو وہ بلاول بھٹو ہے۔کراچی کے لوگوں کے لئیے بہتر سے بہتر کرنے کی کوشش کروں گا۔عام پارٹی ورکر کی حیثیت سے جوائن کیا ہے۔قومیتوں سے بالاتر ہوکر سوچنا ہوگا اگر پاکستان کو آگے لے کر جانا ہے۔سیاست عبادت کا درجہ رکھتی ہے۔ تمام مذاہب کے حقوق کے لئیے بھی پیپلز پارٹی سب سے بہتر رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ آصف علی زرداری نے بھی بہت قریب سے دیکھا ہے۔سعید غنی نے کہا کہ ساجد حسن اور ان کی فیملی کو خوش آمدید کرتا ہوں۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -