قطری وزیراعظم ایک ایسے ارب پتی کی شادی میں پہنچ گئے کہ پوری دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا کیونکہ یہ آدمی۔۔۔

قطری وزیراعظم ایک ایسے ارب پتی کی شادی میں پہنچ گئے کہ پوری دنیا میں ہنگامہ ...
قطری وزیراعظم ایک ایسے ارب پتی کی شادی میں پہنچ گئے کہ پوری دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا کیونکہ یہ آدمی۔۔۔

  

دوحہ(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور دیگر اتحادی عرب ممالک کی قطع تعلقی اور عالمی دباؤ کے بعد قطری حکومت نے ملک میں دہشت گردوں کے معاونت کاروں کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کرنے کا دعویٰ کیا تھا لیکن گزشتہ دنوں قطری وزیراعظم ایک ایسے ارب پتی شخص کے بیٹے کی شادی میں پہنچ گئے کہ پوری دنیا میں ہنگامہ برپا ہو گیا۔ میل آن لائن کے مطابق یہ شادی عبدالرحمان بن عمیر النوامی کے بیٹے کی تھی جو مبینہ طور پر دہشت گردوں کا مالی معاون ہے۔ اس پر عراق میں لڑنے والے جنگجوؤں کو ماہانہ 10لاکھ پاؤنڈ (تقریباً 16کروڑ 17لاکھ روپے) کی مالی معاونت فراہم کرنے کا الزام بھی عائد ہو چکا ہے۔

رپورٹ کے مطابق کچھ عرصہ قبل امریکہ، برطانیہ اور اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل کی طرف سے عبدالرحمان کو دہشت گردی کا مالی معاون ڈکلیئر کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا جس کے بعد قطری حکومت کی طرف سے بھی بیان جاری ہوا تھا کہ وہ بھی اسے دہشت گردوں کا مالی معاون ڈکلیئر کرنے جا رہی ہے لیکن گزشتہ روز دنیا نے جو منظر دیکھا وہ اس بیان کے قطعی برعکس قرار دیا جا رہا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق قطری وزیراعظم شیخ عبداللہ بن ناصر بن خلیفہ الثانی، عبدالرحمان کے بیٹے کی شادی میں مہمان خصوصی کے طور پر شریک ہوئے۔ ان کی دولہا سے معانقہ کرنے کی تصاویر بھی منظرعام پر آئی ہیں جن سے ان کی عبدالرحمان کے خاندان سے قربت کا اندازہ ہوتا ہے۔واضح رہے کہ ابھی چند دن قبل ہی قطر کے امیر نے امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ سے ملاقات میں انہیں یقین دہانی کرائی تھی کہ ہم ان لوگوں کو قطعاً برداشت نہیں کرتے جو دہشت گردی کی مالی معاونت کرتے ہیں۔‘‘

مزید :

عرب دنیا -