جیل سے فرار ہونے والا عراقی مذہبی رہنما  دوبارہ گرفتاری سے بچنے کیلئے بھاگا تو دوڑتے ہوئے جان گنوا بیٹھا

جیل سے فرار ہونے والا عراقی مذہبی رہنما  دوبارہ گرفتاری سے بچنے کیلئے بھاگا ...
جیل سے فرار ہونے والا عراقی مذہبی رہنما  دوبارہ گرفتاری سے بچنے کیلئے بھاگا تو دوڑتے ہوئے جان گنوا بیٹھا
سورس: File

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

بغداد (ڈیلی پاکستان آن لائن)  ایک عراقی مذہبی رہنما  جو جیل سے فرار ہو کر دو دن تک بھاگتا رہا، اس وقت جان سے ہاتھ دھو بیٹھا  جب سیکیورٹی فورسز نے اسے پکڑنے کیلئے  ناکہ بندی کی۔ سعد کمبش  جو کبھی عراق کے سنی وقف کے سربراہ تھے، کو رواں ماہ کے آغاز میں دھوکہ دہی کے الزام میں چار سال قید کی سزا سنائی گئی تھی۔

خبر ایجنسی اے ایف پی کے مطابق وہ منگل کی رات کو فرار ہوئے تھے جس کے بعد وزیر اعظم محمد شیعہ السوڈانی کی طرف سے بغداد میں سیکیورٹی چیف کو برطرف کرنے اور دارالحکومت کے گرین زون میں حراستی مرکز کو بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

وزارت داخلہ نے کہا کہ کمبش  جیل سے فرار کے بعد شمالی عراق کے موصل میں پائے گئے تھے   جو بغداد سے تقریباً 350 کلومیٹر شمال میں ہے۔ بعد میں ایک بیان میں داخلہ اور صحت کی وزارتوں نے کہا کہ  انہوں  نے دوبارہ گرفتاری سے بچنے کی کوشش کی تھی۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ 'اپنی گرفتاری کے دوران اس نے بھاگنے کی کوشش کی،  فورسز نے اس کا تعاقب کیا لیکن وہ بے ہوش ہو  کر گر گیا،  وہ ہسپتال لے جانے سے پہلے ہی دم توڑ چکا تھا۔"

مزید :

عرب دنیا -