خون فروخت کرنےوالے عملے کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست دائر

خون فروخت کرنےوالے عملے کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست دائر

  

لاہور(نامہ نگار)مینٹل ہسپتال کے مریضوں کاخون نکال کرفروخت کرنے والے عملے کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست سیشن کورٹ میںدائرکردی گئی۔ایڈیشنل سیشن جج شفقت اللہ کی عدالت میں مینٹل ہسپتال کے عملہ،ایس ایچ او تھانہ شادمان، چوکی انچارج سروسزہسپتال،کانسٹیبل شریف اور فیصل کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست شہری جاوید اقبال کی جانب سے دائر کی گئی ہے ۔درخواست گزارکے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ مینٹل ہسپتال کاعملہ مریضوں کاخون نکال کرسرکاری اورپرائیوٹ ہسپتالوں میں فروخت کررہاہے،ملزم عامر بشیراوراس کے ساتھی معصوم لوگوں زندگیاں تباہ کر رہے ہیں، درخواست میں مزید کہا گیا ہے کہ عامر بشیر گینگ کے خلاف تھانہ شادمان میں کارروائی کے لئے درخواست دائر کی گئی جس پرچوکی انچارج سروسزہسپتال نے ملزموں کوگرفتارکرنے کے بعدرشوت لے کرچھوڑدیا،درخواست گزارکے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ 26جولائی کوایس ایچ او شادمان کوچوکی انچارج سمیت 2پولیس اہلکاروں کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی درخواست دی گئی لیکن ایس ایچ اوشادمان نے بد نیتی سے پولیس اہلکاروں کے نام خارج کرتے ہوئے جرم کے مطابق دفعات نہ لگا کر مقدمہ درج کیا،عدالت نے ابتدائی سماعت کے بعد28 اگست تک جواب طلب کر لیاہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -