تحریک انصاف کے ممکنہ استعفے ‘ ملتان سے قومی و صوبائی اسمبلی کی 4نشستیں خالی ہونگی

تحریک انصاف کے ممکنہ استعفے ‘ ملتان سے قومی و صوبائی اسمبلی کی 4نشستیں خالی ...

  

ملتان(راﺅ نعمان علی سے)وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ پنجاب سے استعفیٰ لینے کے لئے جانے والوں نے خود ہی اپنے استعفیٰ سیکرٹری قومی اسمبلی کو جمع کرا دیئے ہیں اگر تحریک انصاف کے اراکین قومی و صوبائی اسمبلی کے استعفیٰ قبول ہوتے ہیں تو ملتان میں قومی اسمبلی کی 2اور بائی اسمبلی کی بھی دو نشستیں خالی ہونگی جن میں قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 149میں مخدوم جاوید ہاشمی،این اے 150میں مخدوم شاہ محمود حسین قریشی، صوبائی حلقہ پی پی 194سے ظہیرالدین خان علیزئی اور صوبائی حلقہ پی پی 195سے جاوید انصاری کی نشستیں خالی ہونگی یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ سابقہ دور حکومت میں بھی یہی دونوں مخدوم تھے جنہوں نے اپنی اپنی پارٹیاں پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) کو چھوڑ تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کی تھی اور وہ سابقہ دور حکومت میں بھی قومی اسمبلی کی نشستوں سے مستعفیٰ ہو گئے تھے اور ان دونوں نے ضمنی الیکشن میں بھی حصہ نہےں لیا تھا جبکہ ظہیرالدین خان علیزئی اور جاوید انصاری پہلی مرتبہ ممبر صوبائی اسمبلی منتخب ہوئے تھے تحریک انصاف کے قائدین کی جانب سے استعفیٰ قومی اسمبلی میں جمع کرانے کے بعد مسلم لیگ(ن)کے ان امیدواروں میں امید کی کرن ابھر پڑی ہے جنہےں الیکشن 2013میں شکست کا سامنا ہوا تھا اگر ان کے استعفیٰ قبول کر لئے جاتے ہیں تو الیکشن کمیشن آف پاکستان 60روز کے اندر ضمنی الیکشن کرانے کا شیڈول جاری کرے گا اور ضمنی الیکشن میں این اے 150سے سابق ایم این اے رانا محمود الحسن اور این اے 149سے سابق ایم این اے شیخ طارق رشید مسلم لیگ(ن)کے امیدوار ہو سکتے ہیں ۔

ممکنہ استعفے

مزید :

صفحہ آخر -