اب نیا پاکستان نہیں، اسلامی پاکستان بنے گا: سراج الحق

اب نیا پاکستان نہیں، اسلامی پاکستان بنے گا: سراج الحق
اب نیا پاکستان نہیں، اسلامی پاکستان بنے گا: سراج الحق

  

سرگودھا( مانیٹرنگ ڈیسک) امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہا ہے کہ پاکستان کو نیا پاکستان نہیں، اسلامی پاکستان بنائیں جس میں وزیر اعظم اسلامی تعلیمات کا پابند ہوگا۔آج ملک پر جاگیر دار اور سرامایہ دار مسلط ہیں، مجھے دو بار وزارت ملی مگر آج بھی کرائے کے گھر میں رہتا ہوں۔

سرگودھا میں عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے سراج الحق کا کہنا تھا کہ ملک پر جاگیر دار اور سرمایہ دار اشرافیہ مسلط ہے، موجودہ پاکستان ان جاگیرداروں کا پاکستان ہے جبکہ میںان نوجوانوں کی آنکھوں میں اسلامی پاکستان کی نوید دیکھ رہا ہوں۔ ہم مل کر اس پاکستان کو نیا پاکستان نہیں بلکہ اسلامی پاکستان بنائیں گے، ایک ایسا پاکستان جہاں کا وزیراعظم بھی اسلامی تعلیمات کا پابند ہو گااور اس کے چیف جسٹس کے ہاتھ میں قرآن ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ آج کل اسلام آباد میں سیاسی دنگل ہو رہا ہے اور خونریزی کی کوشش کی جارہی ہے جبکہ میں معاملات کے حل کے لئے سب کی منتیں کر رہا ہوںتاکہ یہ لولی لنگڑی جمہوریت بھی کہیں ختم ہی نہ ہو جائے، اس حوالے آئیندہ اڑتالیس گھنٹے بہت اہم ہیں۔ تحریک انصاف سے بھی مطالبہ ہے کہ استعفے واپس لے کر نظام کو بچائیں۔ ہمیں اس ملک کو بہتر بنانے کے لئے سیاسی ٹھگوں سے نجات حاصل کرنا ہو گی۔ میں اس ملک کے حکمرانوں کو راتوں میں خدا کے سامنے سجدے کرتے دیکھنا چاہتا ہوں۔خطاب کے دوران انہوں نے کہا کہ میں نے آج آصف علی زرداری سے ملاقات میں انہیں کہا کہ اپنے بیٹے بالول کو جماعت اسلامی کا کارکن بنا دیں۔

 سراج الحق نے کہا یہ پاکستان وڈیروں کا پاکستان ہے اور ہمارے حکمران مغل شہزادے ہیں جو الیکشن کے بعد عوام کو کہیں نہیں ملتے مگر مجھے دو بار وزارت ملی اور آج بھی کرائے کے مکان میں رہتا ہوں۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -