وہ معمولی غلطیاں جو ذہین ترین لوگوں کی زندگیاں تباہ کر دیتی ہیں

وہ معمولی غلطیاں جو ذہین ترین لوگوں کی زندگیاں تباہ کر دیتی ہیں
وہ معمولی غلطیاں جو ذہین ترین لوگوں کی زندگیاں تباہ کر دیتی ہیں
کیپشن: Imran

  

آسٹن (نیوزڈیسک) دوران ملازمت ہمارا اکثر ایسے افراد سے پالا پڑتا ہے، جو کمپنی یا دفتر میں انتہائی کامیاب شخص کہلاتے ہیں، مگر آخر میں ان سے کچھ ایسی کوتاہیاں سرزد ہو جاتی ہیں، جو ان کے سارے کیرئیر کو لے ڈوبتی ہیں۔ یہ دیکھ کر اکثر ہمارے ذہن میں سوال اٹھتا ہے کہ اتنے سمجھدار آدمی سے یہ غلطی کیسے ممکن ہے؟یہاں مختصراً ان آٹھ غلطیوں کا ذکر کیا جارہا ہے جو کسی بھی سمجھدار شخص کے کیرئیر کی کامیاب تکمیل میں رکاوٹ بن سکتی ہیں۔

ماضی میں جینا:بہت سے سمجھدار لوگ اپنی ماضی کی کامیابیوں کے سحر میں مبتلا رہتے ہیں ۔ان کے ذہن میں ان کے سابق عروج کازمانہ ،پے درپے کامیابیاںاور عوامی پذیرائی ہوتی ہے ۔سو وہ سمجھتے ہیں کہ یہ سلسلہ جاری رہے گا، حالاں کہ سوچ کا یہ انداز ان میں بے جا اعتماد پیدا کر دیتا ہے جو بعد میں انھیں لے ڈوبتا ہے۔

سطحی پن:جب آپ اپنے کیرئیر کے ابتدائی دنوں میں کامیابی حاصل کر نے کے بعد اگلے مراحل تک پہنچتے ہیں تو آپ کے ذہن میں اپنی سابق کامیابیوں کا نقشہ ہوتا ہے۔ دوران ملازمت ترقی کے ساتھ ذمہ داریاں بھی بڑھتی ہیں، لیکن بے جا اعتماد رکھنے والے افراد یہ سمجھتے ہیں کہ ان کی کامیابیاں ماضی کی طرح جاری رہیں گی، لہذا وہ کام کی تفصیلات میں کم توجہ دینے لگتے ہیں۔ وہ افراد اور اشیاءکی تفاصیل میں جانے سے احتراز کرتے ہیں۔ خود کو اور دوسروں کو یہ کہہ کر مطمئن کرتے ہیں کہ ”وہ مصروف ہیں“ ۔یہ رویہ ان کے لئے نقصان کا باعث بنتا ہے۔

اپنی صلاحیتوں اور کمزوریوں سے لاعلمی:ہر شخص میں چاہے وہ جتنا ہی کامیاب کیوں نہ ہو بہت سی کمزوریاں بھی رکھتا ہے۔ ایک لمبی دوڑ کے شہسوار جب آئینے کے سامنے کھڑے ہوتے ہیں تو اپنی کمزوریوں کو بطور خاص ملحوظ نظر رکھتے ہیں۔ وہ ایسے افراد کی تلاش میں رہتے ہیں جو ان کمزوریوں کی تلافی کر سکیں کیونکہ ممکن ہے دوسرے لوگ ان پہلووں میں مضبوط ہوں۔ بہت سے لوگ محض اس لئے ناکام ہو جاتے ہیں کہ وہ سمجھتے ہیں کہ انھیں ان معاملات پر بھی دسترس ہے جن سے ان کا کوئی واسطہ نہیں ہوتا ۔

 اپنی رائے کو حتمی سمجھنا: کوئی بھی شخص یہ پسند نہیں کرتا کہ اسے ٹوکا جائے یا غلط کہا جائے۔ ہاں یہ ممکن ہے کیرئیر کی ابتداءمیں باس اگر آپ کو ٹوکے تو آپ اس کی بات سن لیں لیکن پے درپے کامیابیوں کے بعد رویہ بدل جاتا ہے۔ جب آپ باس بنیں گے تو تنقید کرنے والے کو اپنی کمپنی کے لئے غیر موزوں تصور کریں گے۔آپ ایسے لوگوں کی تلاش میں رہیں گے جو ہاں میں ہاں ملاتے ہوں۔ ماضی کی کامیابیاں آپ کو اس دھوکے میں مبتلا کر دیں گی کہ آپ غلط نہیں ہو سکتے ۔اپنے فیصلوں پر آپ کا اصرار آپ سمیت پوری کمپنی کو لے ڈوبے گا۔

ترش رویہ:کیرئیر میں نشیب و فراز آتے رہتے ہیں۔کامیابیاں اور ناکامیاں ساتھ ساتھ چلتی ہیں۔بہت سے سمجھدار اور کامیاب لوگ یہ بھول جاتے ہیں کہ ان کا کوئی عمل یا شخص انھیں اس مقام سے گرا بھی سکتا ہے۔ لہذا انھیں اپنے ارد گرد موجود اتحادی افراد کی ضرورت بھی رہتی ہے۔ انھیں ان افراد سے محبت کا رشتہ رکھنا چاہیے۔ان پر ہر گز اپنی ذہانت کا رعب نہیں ڈالنا چاہیے ۔کیونکہ مستقبل میں کبھی بھی آپ کو ان کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔

اپنے دائرہ کار سے تجاوز: بہت مرتبہ آپ نے بزنس ٹی وی پر ایسے افراد کے بارے میں سنا ہو گاجو اپنے دور کے کامیاب مینجر تھے لیکن آخر میں وہ کمپنی کے لئے تباہ کن ثابت ہوئے۔ اس کی بڑی وجہ یہ ہے کہ وہ لوگ خود کو کامیاب سمجھتے ہوئے کسی نئے کام یا شعبے میںہاتھ ڈال دیتے ہیں، جس کے بارے میں انھیں تجربہ نہیں ہوتا۔کامیاب لوگوں کو یہ مقولہ ذہن میں رکھنا چاہیے کہ”ہم کاروبار میں کامیاب ہیں اس لئے کہ ہم وہ کرتے ہیں جو ہم جانتے ہیں اس کا یہ مطلب ہر گز نہیں کہ ہم سب کام جانتے ہیں“

سینئرز سے رابطے میں کمی: بہت سے سمجھدار لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ ان کا کام ہی ان کا تعارف ہے، لیکن وہ یہ بھول جاتے ہیں کہ ہم ایسی دنیا میں رہتے ہیں جہاں تعلقات بہت اہمیت رکھتے ہیں۔ سمجھدار لوگ متعدد بار اپنی ذہانت اور کامیابی کے سحر میں بہت سے ایسے افراد سے تعلق قائم کرنا بھول جاتے ہیں جو ان کی ترقی میں کافی مو¿ثر ثابت ہو سکتے ہیں۔اپنے آپ میں رہنے کا رویہ آپ کی پروموشن میں رکاوٹ بن سکتا ہے۔

بلا ضرورت خطرات مول لینا: اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ اب کھیل آپ کے ہاتھ میں ہے اور کوئی بھی چیز آپ کی کامیابی کی راہ میں رکاوٹ نہیں بن سکتی تو آپ سنگین غلطی کر رہے ہیں۔بہت سے کامیاب لوگ جوئے، شراب نوشی،جنسی بے راہ روی وغیرہ میں مبتلا ہو کر اپنا کیرئیر داو¿ پر لگا دیتے ہیں ۔ان تمام چیزوں سے خود کو روکنا ضروری ہے۔

ایک طویل کامیاب کیرئیر کے لئے اینڈی گروو کے یہ الفاظ بہت اہمیت رکھتے ہیں۔

”سمجھدار لوگ جو اپنے کیرئیرز میں کامیاب ہوتے ہیں ،وہ محنت سے کبھی جی نہیں چراتے ،مسلسل تعلقات بناتے ہیں،اپنی خامیوں اور خوبیوں پر نگاہ رکھتے ہیں۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -