شہباز شریف کی سوشل میڈیا میں بھی اونچی پرواز

شہباز شریف کی سوشل میڈیا میں بھی اونچی پرواز

  

ایک وقت تھا جب دنیا میں صرف پریس میڈیا ہوا کرتا تھا اور لوگ صرف اخبارات کے ذریعے ہی اپنے ملک اور دنیا کے حالات حاضرہ سے واقف ہوا کرتے تھے لیکن وقت کے ساتھ ساتھ حضرت انسان ترقی کی منازل طے کرتا گیا اور نت نئی ٹیکنالوجی متعارف ہوتی چلی گئی ،پریس میڈیا کے ساتھ الیکٹرانک بھی فوری خبر کا ذریعہ بن گیا ۔پریس میڈیا پر تو لوگوں کو ایک دن بعد جاکر کسی خبر کی اطلاع ملتی تھی لیکن الیکٹرانک میڈیا نے اس کام کو انتہائی آسان بنا دیا ہے ،اب صورت حال یہ ہے کہ ایک طرف کوئی واقعہ رونما ہو رہا ہوتا ہے تو دوسری طرف لوگ لاکھوں میل دور بیٹھے الیکٹرانک میڈیا کے ذریعے اس واقعہ کو براہ راست دیکھ رہے ہوتے ہیں۔الیکٹرانک میڈیا کے علاوہ ایک اور میڈیا بھی آج کل دنیا بھر کے لوگوں میں اپنی مقبولیت کے جھنڈے گاڑ رہا ہے ،اس کا نام ہے سوشل میڈیا ،یہ میڈیا ہمارے ملک سمیت پوری دنیا میں اسقدر مقبول ہو چکا ہے کہ زندگی میں سرانجام دئیے جانے والے روز مرہ کے کاموں کا حصہ بن چکا ہے ،سوتے جاگتے سوشل میڈیا کا وزٹ کرنا اور اپنا اسٹیٹس اپ لوڈ کرنا لازم سمجھا جاتا ہے، اس میڈیا نے اپنے صارفین کو اپنا دیوانہ بنا رکھا ہے ۔

سوشل میڈیا کے نقصانات بھی کئی ہیں لیکن اس کے فوائد بھی ان گنت ہیں وہ لوگ یا وہ رشتے دار یا وہ دوست جو برسوں ایک دوسرے سے مل نہیں پاتے تھے سوشل میڈیا کے ذریعے اب وہ ہر وقت رابطے میں ہیں۔قارئین کرام !ہمارے ملک میں آپ سوشل میڈیا کی مقبولیت کا اندازہ اس بات سے لگا سکتے ہیں کہ ملکی سیاسی جماعتیں بھی سوشل میڈیا پر متحرک دکھائی دیتی ہیں اور اس میڈیا کو اپنی پبلسٹی کے لئے استعمال کر رہی ہیں ۔مختلف سیاسی جماعتوں سے تعلق رکھنے والے افراد ہر وقت ایک دوسرے کو نیچا دکھانے میں مصروف رہتے ہیں،لیکن اس بار اس میڈیا کو پاکستان کے سب سے بڑے صوبے پنجاب کے وزیر اعلی میاں شہباز شریف نے ایک مثبت اور منفرد کا م کے لئے استعمال کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ قارئین کرام! یوں وزیراعلی پنجاب اپنی دبنگ شخصیت اور اپنے ہارڈ ورک کے حوالے ملک کے سیاست دانوں میں ایک منفرد حیثیت رکھتے ہیں ، اس بار بھی وزیر اعلی نجاب سوشل میڈیا کی تاریخ میں ایک منفرد کام کرنے جارہے ہیں ،وزیر اعلی پنجاب 23اگست کی شام 7بجے اپنے فیس بک پیج پر ویڈیوز میسج کے ذریعے عوام کے سوالوں کے جواب دیں گے ۔اپنے ایک فیس بک پیغام میں وزیر اعلی پنجاب نے کہا ہے کہ عوامی فیڈ بیک ان کے لئے رہنمائی کا ذریعہ ہے اور وہ اس پر عوام کے شکر گزار ہیں ،ان کا مزید کہنا تھا کہ ان کو فیس بک پر لاکھوں لوگوں کے پیغام موصول ہوتے ہیں کہ لوگ ان سے براہ راست رابطہ کرنا چاہتے ہیں ،اس لئے انہوں نے اپنے فیس بک پر لوگوں سے ان کے ضلع،شہر اور گاؤں کے مسائل سے متعلق جاننے اور فیس بک پر ان کے سوالات سننے اور لوگوں کی آرا جاننے کا فیصلہ کیا ہے ۔

فیس بک پر عوام وزیراعلی پنجاب سے جو سوال کریں گے وہ ان کا براہِ راست جواب دیں گے۔ قارئین کرام ! سوشل میڈیا کی تاریخ میں ایسا پہلی دفعہ ہورہا ہے کہ حکومتی جماعت کے ایک اہم رہنما اور ملک کے سب سے بڑے صوبے کے وزیراعلی فیس بک پر عوام سے براہ راست بات کریں گے ان کے مسائل سنیں گے اور ان کے سوالوں کے نہ صرف جواب دیں گے بلکہ ان مسائل کو فوری حل کروانے کیلئے ضروری احکامات بھی جاری کریں گے ۔قارئین!وزیر اعلی پنجاب کے اس اقدام سے انہیں عوامی مسائل کا علم ہونے اور ترجیحات کے تعین میں مدد ملے گی ۔ سوشل میڈیا تقریباً ہر انسان کی پہنچ میں ہے اور فیس بک تک رسائی ہر شخص تک نہائت ہی آسان ہے اس لئے کوئی بھی شخص آسانی سے اپنی آئی ڈی بنا کر وزیراعلی پنجاب کے پیج facebook_com/shehbazsharif پر اپنا سوال یا اپنا مسئلہ پوسٹ کر سکتا ہے اور براہ راست ان کو اپنے مسائل سے آگاہ کر سکتا ہے ۔(یار لوگوں )کا کہنا ہے کہ وزیر اعلی پنجاب نے سوشل میڈیا کا مثبت استعمال کر کے دوسرے سیاسی رہنماؤں کیلئے ایک بار مثال قائم کر دی ہے۔فیس بک پر براہ راست عوام سے رابطہ کرنا ایک انتہائی احسن اقدام ہے ۔اس سے وزیراعلی پنجاب کو لوگوں کے مسائل حل کرنے اور صوبے میں گڈ گورننس کے خواب کو شرمندہ تعبیر کرنے میں مدد ملے گی ۔

مزید :

کالم -