بچوں کی ایک گڑیا کے ذریعے عرب ملک میں مسافر جہاز کو دھماکے سے اُڑانے کی کوشش، گڑیا کے ذریعے یہ کام کیسے کیا جاسکتاہے؟ جان کر آپ بھی کانپ اُٹھیں گے

بچوں کی ایک گڑیا کے ذریعے عرب ملک میں مسافر جہاز کو دھماکے سے اُڑانے کی کوشش، ...
بچوں کی ایک گڑیا کے ذریعے عرب ملک میں مسافر جہاز کو دھماکے سے اُڑانے کی کوشش، گڑیا کے ذریعے یہ کام کیسے کیا جاسکتاہے؟ جان کر آپ بھی کانپ اُٹھیں گے

  

بیروت(مانیٹرنگ ڈیسک) لبنان میں سکیورٹی فورسز نے شدت پسند تنظیم داعش کی طرف سے اماراتی ایئرلائنز کی ایک پرواز کو دھماکے سے اڑانے کی کوشش ناکام بنا دی ہے۔ اس واردات میں دہشت گردوں نے ایک ایسی چیز میں بم چھپا کر جہاز میں لیجانے کی کوشش کی کہ کوئی سوچ بھی نہ سکتا تھا۔ نیوزویک کی رپورٹ کے مطابق لبنانی وزیرداخلہ نوحاد میکنوک نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ ”لبنانی پولیس انٹیلی جنس نے بیروت ایئرپورٹ پر عامر خیات نامی ایک دہشت گرد کو گرفتار کیا ہے جس کے سامان سے دو دھماکہ خیز ڈیوائسز برآمد ہوئی ہیں۔ اس نے یہ بم بچوں کی گڑیا’باربی ڈول‘ اور گوشت کا قیمہ بنانے والے گرائنڈر میں نصب کر رکھے تھے۔“

سپین میں اسلام سے نفرت بڑھنے لگی، مسجد کی ایسی توہین کردی گئی کہ ہر مسلمان سن کر غصے سے آگ بگولہ ہوجائے

نوحاد نے مزید بتایا کہ ”ملزم یہ بم لے کر ابوظہبی سے آسٹریلیا جانے والی پرواز پر سوار ہونا چاہتا تھا لیکن ایئرپورٹ پر اس کے سامان کا وزن ایئرلائنز کی مقرر کردہ حد سے 15پاﺅنڈ زیادہ ہو گیا جس کے باعث وہ بیگ لیجانے میں ناکام رہا۔ اسی بیگ میں دونوں چیزیں موجود تھیں جن میں بم نصب تھے۔ اس کے بیگ کا وزن زیادہ ہونے کی وجہ سے وہ پکڑا گیا۔“نوحاد نے مزید بتایا ہے کہ ”ملزم کے ساتھ 3 اور افراد بھی اس واردات کی منصوبہ بندی میں شریک تھے، جو سب کے سب لبنانی نژاد آسٹریلوی شہری اور باہم سگے بھائی ہیں، جن کے نام خالد خیات، طارق خیات اور محمود خیات ہیں۔ خالد اور محمود آسٹریلیا میں موجود تھے جنہیں وہاں گرفتار کر لیا گیا ہے جبکہ طارق شام میں ہے اور داعش کے ساتھ مل کر لڑ رہا ہے۔ ملزم جس پرواز کو نشانہ بنانا چاہتا تھا اس میں 400افراد سوار تھے جن میں 120لبنانی شہری تھے۔

مزید :

بین الاقوامی -