کراچی، نامعلوم افراد نے صوبائی وزیر غلام مرتضیٰ بلوچ کے بیٹے کواغوا کر لیا

کراچی، نامعلوم افراد نے صوبائی وزیر غلام مرتضیٰ بلوچ کے بیٹے کواغوا کر لیا

کراچی(آن لائن ) وزیراعلیٰ سندھ کے معاون خصوصی اور صوبائی وزیر غلام مرتضیٰ بلوچ کے بیٹے کو گڈاپ سٹی سے نامعلوم افراد نے اسلحے کے زور پر اغوا کر لیا۔ پولیس نے واقعے کی تفتیش کا آغاز کر دیا۔تفصیلات کے مطابق گڈاپ سٹی کے علاقے باقائی میڈیکل اسپتال کے قریب صوبائی وزیر غلام مرتضیٰ بلوچ کے بیٹے کو اغوا کر لیا گیا۔ اہل خانہ کے مطابق نامعلوم ملزمان نے پہلے گاڑی میں موجود تمام افراد کو اسلحہ کے زور پر اغوا کیا اور کچھ فاصلے پر جا کر تمام افراد کو گاڑی سے اتار دیا، تاہم مرتضی بلوچ کے بیٹے حیات کو گاڑی سمیت اغوا کر کے فرار ہو گئے۔ پولیس کے مطابق اہل خانہ کی درخواست وصول کر کے اے وی سی سی اور سی پی ایل سی کی مدد سے تفتیش شروع کر دی گئی ہے۔ اغوا کا واقعہ بارش کے دوران پیش آیا۔ ایس ایس پی ملیر راؤ انوار کے مطابق تیز بارش میں اطلاع دیر سے ملی، ناکہ بندی شروع کروا دی گئی ہے۔ وزیراعلیٰ سندھ اور وزیر داخلہ کو بھی واقعے کی اطلاع دے دی گئی ہے۔دوسری جانب صوبائی وزیر داخلہ سندھ سہیل انور خان سیال نے مرتضی بلوچ کے صاحبزادے کے اغوا پر نوٹس لیتے ہوئے مغوی کی فوری اوربحفاظت رہائی کے احکامات جاری کئے ہیں۔

بیٹا اغوا

مزید : صفحہ آخر