امریکہ کا پاکستان کیخلاف خاموشی توڑنا قابل ستائش ہے : افغانستان ، بھارت

امریکہ کا پاکستان کیخلاف خاموشی توڑنا قابل ستائش ہے : افغانستان ، بھارت

  

نئی دہلی ، کابل (مانیٹرنگ ڈیسک )بھارت اور افغانستان نے امریکہ کی پاکستان ، افغانستان اور جنوبی ایشیاء کیلئے نئی پالیسی کا خیر مقدم کیا ہے ، اس ضمن میں بھارت کا کہنا ہے وہ افغان عوام کیساتھ اپنی دوستی نبھاتے ہوئے تعمیرو ترقی میں معاونت جاری رکھے گا،ہم پرامن، خوشحا ل اور مستحکم افغانستان کیلئے پرعزم ہیں۔بھارتی وزارتِ خارجہ کے بیان میں کہا گیا ہے انڈیا افغانستان اور سرحد کے اْس پار دہشت گرد و ں کی محفوظ پناہ گاہوں کو ختم اور مختلف چیلنجز کا مقابلے کرنے کیلئے امریکہ کے اقدامات کا خیر مقدم کرتا ہے،دہشتگردی کے معاملے میں انڈیا کے خدشات اور مقاصد مشترکہ ہیں۔ادھر افغانستان کے صدر اشرف غنی نے امریکی افواج کی ملک میں موجودگی کے فیصلے کو خوش آئند قرار دیا اورامریکی عوام کا شکریہ ادا کرتے ہوئے اسے دہشت گردی کیخلاف مشترکہ جدوجہد قرار دیا۔افغان صدارتی دفتر سے جاری بیان میں کہا گیا ہے دہشتگردی کے خاتمے کیلئے افغانستان اور امریکہ شراکت داری اہم ترین موڑ پر ہے۔ہماری افواج اپنی طاقت سے طالبان سمیت د یگر دہشت گردوں کو یہ باوار کروائیں گی کہ وہ کبھی بھی ہم پر عسکری برتری حاصل نہیں کر سکتے ہیں۔ قیامِ امن ہماری ترجیح ہے ،یہ د ہشت گر د ی کے خطرے سے نمٹنے کیلئے مشترکہ جدوجہد ہے۔دریں اثناء امریکہ میں متعین افغان شفیر حامداللہ محب نے بھی ڈونلڈ ٹرمپ کے پاکستان کے با رے میں بیان کو قابل ستائش قرار دیتے ہوئے کہا ہے ہم امریکی صدر کے پاکستان کیخلاف خاموشی توڑنے پر شکرگزار ہیں اور اس فیصلے کو خوش آئند کہتے ہیں کیونکہ یہ امریکہ اور افغانستان کے مشترکہ مفاد میں ہے، افغانستان کو کامیابی کی جانب لے جانے کیلئے راہ ہموار کرنے کیلئے ایسا پہلی بار ہواہے اور ٹرمپ نے اب وہ حکمت عملی اپنائی ہے جو افغانستان کو وہ دیگی جسکی اسے ضرور ت ہے۔امریکہ کی طرح افغانستان بھی افغان امریکی اور نیٹو افواج کی امن میں پیشرفت کیلئے دی گئی قربانیوں کی خاطر اس جنگ کا دیر پا اور معتبر نتیجہ چاہتا ہے۔

بھارت ، افغانستان

مزید :

علاقائی -