ٹرمپ بیان سے پاکستان کو منفی پیغام گیا

ٹرمپ بیان سے پاکستان کو منفی پیغام گیا
 ٹرمپ بیان سے پاکستان کو منفی پیغام گیا

  

اسلام آباد(آن لائن) پاکستان پیپلزپارٹی کی رہنما شیری رحمان نے کہا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے پالیسی بیان سے پاکستان کو منفی پیغام گیا ہے،مستحکم اور پرامن افغانستان پاکستان کے مفاد میں ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے پاک افغان پالیسی بیان کے بعد میڈیا سے گفتگو میں کیا۔شیری رحمان نے کہا کہ افغانستان سے متعلق امریکی پالیسی مبہم ہے،افغانستان میں قیام امن کیلئے تمام قوتوں کو مل کر کام کرنا ہوگا کیونکہ مستحکم اور پرامن افغانستان ہی پاکستان کے مفاد میں ہے،پاکستان اور بھارت میں دراڑوں کے بجائے قیام امن کیلئے کام کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ امریکہ کی طرف سے متوقع پالیسی بیان آیا ہے مگر ہمارے دفتر خارجہ سے امریکہ کے بیان پر ابھی تک رد عمل سامنے نہیں آیا،وزیرخارجہ کہاں ہے؟۔شیری رحمان کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی نے پاکستان کے مفادات کو ترجیح دی ہے اور ہمیشہ آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کی ،ہم نے اپنی حکومت میں7مہینے نیٹو کی سپلائی بند رکھی اورامریکہ کے دباؤ میں نہیں آئے،ہمیں پاکستان کے مفاد کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے ہر بات کو پرامن طریقے سے حل کرنا چاہئے اور وزیرخارجہ وزارت کو منظم کرکے جلد از جلد اجلاس بلا کر امریکہ کو واضح اور دو ٹوک جواب دے۔

شیری رحمان

مزید :

صفحہ اول -