صدر ہائکورٹ بار ملتان کے وارنٹ گرفتاری کیکلاف وکلاء کی ہڑتال ، مظاہرے ، ریلیاں

صدر ہائکورٹ بار ملتان کے وارنٹ گرفتاری کیکلاف وکلاء کی ہڑتال ، مظاہرے ، ...

 ملتان ، دنیا پور، کبیر والا ، میلسی ، وہاڑی، خانیوال ، کہروڑ پکا، چشتیاں ، ڈیرہ غازیخان، کروڑ لعل عیسن (خبر نگار خصوصی، نمائندگان) صدر ہائیکورٹ بار ملتان شیر زمان قریشی سے اظہار یکجہتی اور مطالبات کی منظوری کیلئے ملتان سمیت جنوبی پنجاب بھر میں وکلا کی ہڑتال احتجاجی مظاہرے کیے گئے اور ریلیاں(بقیہ نمبر51صفحہ12پر )

نکالی گئیں۔ اس سلسلے میں ملتان سے خبر نگار خصوصی کے مطابق ہائیکورٹ وڈسٹرکٹ بارایسوسی ایشنز ملتان کی جانب سے آج 30 ویں روز بھی ہڑتا ل جاری رکھنے اورتوہین عدالت کیس کے ساتھ ضلع لودھراں اورساہیوال کے متعلق نوٹیفکیشن کی واپسی تک تحریک ختم نہ کرنیکا اعلان کیاگیاہے۔اور وکلاء کے گھروں پر چھاپے اورشیرزمان قریشی کے رشتہ داروں کی گرفتاری کی بھی مذمت کی گئی ہے۔اس ضمن میں گزشتہ روز29 ویں دن بھی مکمل ہڑتال کی گئی ہڑتال کو مؤثربنانے کے لئے گزشتہ روزجنرل سیکرٹری ہائیکورٹ بارصاحبزادہ محمدندیم فرید کی قیادت میں وکلاء کی بڑی تعدادہائیکورٹ بار کے احاطہ میں اکٹھے ہوگئی اورتمام وکلاء سے پیش نہیں ہوکرہڑتال کومؤثربنانے کی ہدایت کی گئی بعد ازاں وکلاء کی جانب سے ہائیکورٹ بارکے احاطہ میں احتجاجی ریلی نکالی گئی اورنعرے لگائے گئے جس کے بعد وکلاء چوک کچہری پر جمع ہوئے اوردھرنادینے کے ساتھ احتجاجی اجلاس منعقد کیا ہے۔ اس موقع پرخطاب کرتے ہوئے ڈسٹرکٹ بارایسوسی ایشن ملتان کے قائم مقام صدر عبدالستار ملک نے کہاکہ وکلاء نے کالے کوٹ کے تقدس اورحرمت کے لئے جو جدوجہدشروع کی ہے اس کو پایہ تکمیل تک پہنچائے بناء دم نہیں لیں گے۔قائم مقام صدرہائیکورٹ بار فیروزہ فیض نے کہاکہ ہائیکورٹ بارکی پوری ایگزیکٹوباڈی بھرپورطریقے سے صدرشیرزمان کے ساتھ ہے اور ان کی جانب سے شروع کی گئی تحریک کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے۔جنرل سیکرٹری ہائیکورٹ بار صاحبزادہ محمدندیم فرید نے کہاکہ جو افرادوکلاء کی تحریک کے مقصدکواب تک نہیں جان سکے انھیں اس کے بارے میں کوئی بات کرنے کا بھی حق حاصل نہیں ہے وکلاء نے پرامن رہتے ہوئے صرف اپنے جائز مطالبات کی بات کی ہے اوریہ کسی فردواحدکے لئے نہیں بلکہ پوری وکلاء برادری کے وقارکے لئے ہے۔سابق صدرہائیکورٹ بارمحموداشرف خان نے کہاکہ وکلاء کی جانب سے اپنے منتخب صدرشیرزمان کی گرفتاری کے لئے ان کے رشتہ داروں کو پکڑنے اورہراساں کرنے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔سابق صدرہائیکورٹ بارسید اطہرحسن شاہ بخاری نے کہاکہ وکلاء تحریک زورپکڑگئی ہے لیکن عیدکی وجہ سے ضمانت کے مقدمات کی حد تک ہڑتال میں کمی کی کوشش کی جائے گی اورصدربارشیرزمان قریشی سے رابطہ ہونے پر ان کے حکم کے مطابق آئندہ کا لائحہ عمل طے کیاجائیگا۔سابق صدرڈسٹرکٹ بارخالداشرف خان نے کہاکہ وکلاء اپنی جان ومال کی قربانی دے کرعدلیہ بحال کراسکتے ہیں تو اپنے حق کیلئے کسی بھی حدتک جاسکتے ہیں۔ سابق صدر لودھراں بار رانالیاقت علی نے کہا کہ پی سی اوکے تحت اپنے فرائض کی ادائیگی شروع کرنے والے وکلاء کو قانون شکن کہہ رہے ہیں لیکن تمام وکلاء اپنے کاز کے لئے ایک ہیں اورصرف وکلاء پر توہین کے الزامات عائدنہیں کئے جائیں بلکہ وکلاء اورسائلوں کے خلاف ہونے والے غیرقانونی اقدامات پر بھی نظرڈالی جائے۔ سابق جنرل سیکرٹری ہائیکورٹ بارسید ریاض الحسن گیلانی نے کہا کہ پہلے چھوٹے سے تنازعہ کو جواز بنا کرملتان بینچ کو ہی بندکردیاگیااوراب یہ حال ہے کہ وکلاء پر ریاست کی جانب سے ظلم کیاجارہاہے جبکہ چندسینئر ٹاؤٹ اپناایمان بیچ کرخوش ہورہے ہیں۔سابق جنرل سیکرٹری ڈسٹرکٹ بارملک محبوب سندیلہ نے کہاکہ کالے کوٹ کی توہین کرنے والے یادرکھیں کہ اگر ہماری توہین کی گئی توکسی کابھی گھر محفوظ نہیں رہے گا۔اس موقع پر غلام مصطفی چوہان،راناغلام حسین،رفیع رضا،خالدمترو،شیخ عتیق الرحمان اورنشیدعارف گوندل نے بھی خطاب کیاہے جبکہ وکلاء نعرے بازی کرتے رہے اور چوک کچہری پراجلاس کی وجہ سے اطراف کی سڑکیں بند رہیں اورشہریوں کو پریشانی کا سامناکرناپڑاجبکہ پولیس کی بھاری نفری اورریسکیو ٹیمیں بھی کسی ناخوشگوارواقعہ سے نبٹنے کے لئے موجودرہی ہیں۔دنیا پور سے نامہ نگار کے مطابق صدر ملتان بار کی گرفتاری کے احکامات کیخلاف دنیا پور بار نے بھی بار روم میں احتجاج کیا۔ اس موقع پر بار کا اجلاس زیر صدارت صدر بار چوہدری محمد عقیل گوندل منعقد ہوا جس میں ملک سہیل اقبال ایڈووکیٹ چوہدری ذوالفقار چھینہ ایڈووکیٹ ودیگر وکلاء نے خطاب کرتے ہوئے اعتزاز احسن ایڈووکیٹ کے وکلاء کیخلاف بیان گرفتار کرنے کی پرزور مذمت کی ۔اور دنیا پور بار میں تاحیات داخلے پر پابندی لگانے کی تحریر پیش کی جسے بار نے مظور کرلیا۔ کبیر والا سے تحصیل رپورٹر کے مطابق بار ایسوسی ایشن کبیروالا کی اپیل پر گزشتہ روز تحصیل کچہری کبیروالا میں مکمل ہڑتال کی گئی اور وکلاء نے عدالتوں کا بائیکاٹ کیا ۔بار ایسوسی ایشن کبیروالاکے صدر مہر امتیاز حسین مرالی ،جنرل سیکرٹری حاجی سعید احمد خان بھٹہ نے وکلاء کے احتجاجی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب تک وکلاء کا مطالبہ تسلیم نہیں کیا جاتا ہے ،وکلاء اپنا احتجاج جاری رکھیں گے۔ میلسی سے نمائندہ پاکستان کے مطابق میلسی بار نے منگل کے روز بھی مکمل ہڑتال کی بار روم پر سیاہ جھنڈا لہرایا اور وکلاء نے بازؤں پر سیاہ پٹیاں باندھیں وکلاء عدالتوں کا بائیکاٹ کیا ہڑتال کی وجہ سے کئی مقدمات کی سماعت التواء میں رہی ۔ وہاڑی سے بیورو رپورٹ، نمائندہ خصوصی کے مطابق صدر ملتان بار شیر زمان سے اظہارِ یکجہتی کر تے ہوئے ڈسٹرکٹ بار وہاڑی کے وکلاء کی مکمل ہڑتال ، کوئی وکیل عدالتوں میں پیش نہ ہوا دوردراز سے آنے والے سائلین کو شدید مشکلات کا سامنا ، سینکڑوں وکلاء نے بار روم سے ڈی پی او آفس تک احتجاجی ریلی نکالی اور دھرنا دیا ،ریلی کی قیادت صد ر بار راؤ شیر ا زرضا ، جنرل سیکرٹری رائے عا مر اسلم کھرل نے کی جبکہ اس موقع پرسابق جنرل سیکرٹریز چودھری ندیم اکرم پرویز، رانا اکبر ، شکیل تارڑ ، عباس لنگڑیال ، شیخ فضل الرحمن گو شا ، اسلم سندھو، ملک ندیم اختر، ملک اظہر اعوان ، سید رفاقت علی شاہ ، غلام حسین ایڈووکیٹس ودیگر وکلاء نے شرکت کی ، ریلی کے شرکاء نے چیف جسٹس اور عدلیہ کے خلاف شدید نعرے بازی کی ،ریلی کے اختتام پر ڈسٹرکٹ بار روم میں ہنگامی اجلاس منعقد ہوا جس میں وکلاء نے پرُامن وکلاء پر پو لیس تشدد کی مذمت کر تے ہو ئے ملتان بار سے بھرپور اظہارِ یکجہتی کیں۔ خانیوال سے بیورو نیوز کے مطابق ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن خانیوال نے ہائی کورٹ بارایسوسی ایشن ملتان کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہوئے تمام دن ہڑتال کی اور مکمل عدالتی بائیکاٹ کیا بارروم کی عمارت پر سیاہ پرچم لہرایا گیا وکلاء کی کثیرتعدادنے سیاہ پٹیاں باندھ کر چوہدری محمد عمر چیمہ ایڈووکیٹ صدر، راجہ سہیل ظفر ایڈووکیٹ جنرل سیکرٹری کی قیادت میں احتجاجی ریلی نکالی ۔ریلی میں شریک وکلاء نے شیر زمان قریشی صدر ہائی کورٹ بار ملتان کے حق میں اور چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ لاہور کے خلاف شدید نعرہ بازی کی ریلی حاطہ کچہری کا چکر لگا تے ہوئے پریس کلب خانیوال تک گئی جہاں پر چوہدری محمد عمر چیمہ صدر ، راجہ سہیل ظفر ایڈووکیٹ جنرل سیکرٹری نے کہا موجودہ چیف جسٹس نے بار اور بینچ کے وقار کو ملحوظ خاطر نہ رکھتے ہوئے ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت بار اور وکلاء جیسے مقدس ادارے میں اختلافات ڈالنے کی کوشش کی ہے نیز لاہور میں وکلاء پر وحشیانہ تشدد کروایا گیا ہے جس کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں اورچیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ لاہور سید منصور علی شاہ کے فی الفور استعفیٰ کا مطالبہ کرتے ہیں۔ کہروڑ پکا سے سٹی رپورٹر کے مطابق گذشتہ روز کہروڑپکا بار میں وکلا نے ملتان بار کے صدر کی گرفتاری آرڈر کے خلاف بازوؤں پر سیاہ پٹیاں باندھ کر ریلی نکالی جس میں وکلا نے چیف جسٹس کے آرڈرز کے خلاف نعرے بازی کی اور پولیس تصادم ، تشدد اور گرفتاری کے آرڈرز کی شدید مذمت کی۔چشتیاں سے نمائندہ پاکستان کے مطابق چشتیاں کے صدر میاں محمد عمران ایڈووکیٹ اور جنرل سیکرٹری ایاز احمد خان جوئیہ نے بتایا کہ پنجاب بار کونسل کی ہدایت پر وکلاء پر تشدد اور لائسنس منسوخ کرنے اور گرفتاری کا حکم دینے کے خلاف چشتیاں بار نے مکمل ہڑتال کی اور کوئی بھی وکیل عدالتوں میں پیش نہیں ہوا۔ڈیرہ غازیخان سے بیورورپورٹ، نمائندہ خصوصی کے مطابق ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن ،ڈیرہ غازیخان نے پاکستان اور پنجاب بار کونسل کی کا ل پر ڈیرہ غازیخان میں بھی وکلاء نے مکمل ہڑتال کی جس سے ضلع کچہری کی رونقیں مانند پڑی رہیں ۔زیادہ تر وکلاء گھروں سے نہیں آئے ۔بارصدر شہزادہ احسان کریم میرانی ،جنرل سیکرٹری ملک فہیم سعید چنگوانی ،سابق ممبر پنجاب بار کونسل ملک محمد سلیم نے وکلاء سے زیادتی اور ان کے خلاف پولیس ایکشن کی شدید مذمت کی اور چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کی طرف سے ملتان کے عہدیداروں کے بلاضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرنے کی شدید مذمت کی۔ کروڑ لعل عیسن سے نمائندہ پاکستان کے مطابق تحصیل بار ایسوسی ایشن کے وکلاء کی چیف جسٹس منصور شاہ کے خلاف احتجاجی ریلی نکالی گئی احتجاجی ریلی میں جنرل سیکرٹری تحصیل بار کروڑ سردار شہاب خان سیہڑ، سابق صدر ذوالفقار خان سیہڑ،سردار عباس خان سیہڑ،سعادت حسین کاظمی،سردار اقبال خان شہانی ،سردار اظہر خان سرگانی،چوہدری حفیظ اللہ مانگٹ،چوہدری عبدالرؤف گجر،ملک سیف اللہ سامٹیہ ،ملک منیر احمد ناوڑا،باغ علی خان،ملک شاہنواز کھوکھر ،ملک اورنگزیب سیال،ملک شعیب ،ملک ثناء اللہ بھٹی ودیگر نے کہا کہ ہم غنڈہ گردی کی شدید مزمت کرتے ہیں ملتان بنچ کو ختم کرنے کا اقدام غیر قانونی ہے جو ہمیں کسی قیمت پر بھی منظور نہیں ہے ۔

وکلاء ہڑتال

مزید : ملتان صفحہ آخر