ریلوے ملتان ڈویژن ‘ درجہ چہارم و دیگر ملازمین کی کمی کے باعث مسائل میں اضافہ

ریلوے ملتان ڈویژن ‘ درجہ چہارم و دیگر ملازمین کی کمی کے باعث مسائل میں اضافہ

  

ملتان( جنرل رپورٹر)ریلوے ملتان ڈویژن میں درجہ چہارم اور دیگر ملازمین کی کمی نے انتظامیہ کے لئے مسائل پیدا کردےئے ۔ ملازمین سے 12,12گھنٹے ڈیوٹیاں اور چھٹیاں منسوخ کرکے کام چلایا جارہا ہے ذرائع کے مطابق ملتان ڈویژن میں کانٹے والوں کی کل آسامیوں کی تعداد 533ہے جبکہ صرف398ملازمین ڈیوٹی سرانجام دے رہے ہیں 135ملازمین کمی کے باعث 3کی جگہ پر صرف 2(بقیہ نمبر61صفحہ7پر )

سے کام لیا جارہا ہے شنٹنگ پوٹر کی کل 60اسامیوں پر صرف26ملازمین کام کررہے ہیں34افراد کی کمی کی وجہ سے شنٹنگ پوٹرز سے اکثر اوقات ڈبل ڈیوٹی لی جاتی ہے اسی طرح43شنٹنگ ماسٹرز کی اسامیوں پر 30افراد ڈیوٹی دے رہے ہیں 13ملازمین اس شعبہ کے بھی کم ہیں ۔پائلٹ ماسٹر کی 28اسامیوں پر صرف10لوگ ڈیوٹی دے رہے ہیں جن سے اکثر اوقات24,24گھنٹے کام لیا جاتا ہے 18ملازمین کی کمی کے باوجود تاحال بھرتی نہ کی جاسکی ہے جبکہ ریلوے میں اہمیت کے حامل گیٹ مینوں کی تعداد بھی ملتان ڈویژن میں کم ہے 179ملازمین کی جگہ165گیٹ مین کام کررہے ہیں 14گیٹ مین کم ہونے کی وجہ سے ملازمین کو چھٹی کے روز بھی ڈیوٹی دینا پڑتی ہے ریلوے کے تمام شعبہ جات میں ملازمین کی اتنی بڑی تعداد میں کمی کے باعث معاملات شدید متاثر ہورہے ہیں پہلے سے کام کرنے والے ملازمین نے وفاقی وزیر ریلوے‘ جی ایم ریلوے سے فوری طور پر بھرتی شروع کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

بھرتی کامطالبہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -