ڈینگی کے مرض میں اضافے کیخلاف اقدامات کی تفصیلات طلب

ڈینگی کے مرض میں اضافے کیخلاف اقدامات کی تفصیلات طلب

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس محمدابراہیم خان اورجسٹس اعجازانورخان پرمشتمل دورکنی بنچ نے پشاورمیں ڈینگی کے مرض میں اضافے کے خلاف دائررٹ پرصوبائی حکومت کے اقدامات کی تفصیلات مانگ لی ہیں عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے سیف اللہ محب ایڈوکیٹ کی جانب سے دائررٹ کی سماعت کی اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ صوبائی دارالحکومت میں ڈینگی کامرض بتدریج بڑھ رہا ہے جبکہ دوسری جانب یونیورسٹی روڈ پرکھدائی کے باعث پانی کے جوہڑ بنے ہوئے ہیں اورصوبائی حکومت کی جانب سے ڈینگی کے بچاؤ کے لئے کوئی اقدامات نہیں کئے جارہے ہیں جبکہ ڈینگی کے تدارک کے لئے پنجاب حکومت نے صوبائی وزیرصحت کی سربراہی میں خصوصی ٹیم پشاوربھجوائی ہے جو متاثرہ افراد کے ٹیسٹ وعلاج کررہی ہے جو خیبرپختونخواحکومت کی ناکامی کامنہ بولتا ثبوت ہے لہذاصوبائی وزیرصحت اورسیکرٹری صحت کو کام سے روک کران کی تنخواہیں قرق کی جائیں فاضل بنچ نے رٹ کی سماعت شروع کی تو اس موقع پر ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل رب نواز عدالت میں موجود تھے جبکہ ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر پشاورگل محمدعدالت میں پیش ہوئے اوربتایا کہ وہ اپنے ہمراہ کوئی ریکارڈ نہیں لائے جس پرفاضل بنچ نے رٹ کی سماعت 24اگست تک ملتوی کرتے ہوئے ڈینگی کی روک تھام کے لئے اب تک کئے جانے والے صوبائی حکومت کے اقدامات کی تفصیلات مانگ لیں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر