باچا خان ماڈل سکول پبی کے پرنسپل پر تشدد کیخلاف متعلقہ حکام عدالت طلب

باچا خان ماڈل سکول پبی کے پرنسپل پر تشدد کیخلاف متعلقہ حکام عدالت طلب

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے جسٹس محمدابراہیم خان اورجسٹس اعجازانورخان پرمشتمل دورکنی بنچ نے عدالتی احکامات کے باوجودباچاخان ماڈل سکول پبی کی پرنسپل کو زبردستی گھرسے نکالنے اورچادراورچاردیواری کاتقدس پامال کرنے پرایس ایچ او تھانہ پبی ٗ ای ڈی او نوشہرہ اورمحکمہ تعلیم کے دیگراہلکاروں کو آج عدالت طلب کرلیاہے عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے یہ احکامات گذشتہ روز درخواست گذار شکیلہ یوسفزئی پرنسپل باچاخان ماڈل سکول پبی کی جانب سے دائرتوہین عدالت کی درخواست پرجاری کئے اس موقع پرعدالت کو بتایاگیاکہ درخواست گذارہ باچاخان ماڈل سکول میں پانچ سال کے کنٹریکٹ پرتعینات ہوئی تھی اورکنٹریکٹ کے ختم ہونے کے قریب صوبائی حکومت نے مذکورہ پوسٹ پرنئی بھرتی کافیصلہ کیاتاہم ہائی کورٹ نے نئی بھرتی روکتے ہوئے حکم امتناعی جاری کردیاتھالیکن حکم امتناعی کے بعد ایس ایچ او پبی ٗ ای ڈی او نوشہرہ اورمحکمہ تعلیم کے حکام نے ان کے گھرپرغیرقانونی چھاپہ ماراورچادراورچاردیواری کاتقدس پامال کرتے ہوئے اسے بالوں سے پکڑکرگھسیٹااورسرعام رسوائی کی

مزید : پشاورصفحہ آخر