اے پی سی کا بائیکاٹ کرنے والی جماعتیں بے نقاب ہوگئیں،سلیم حیدر

اے پی سی کا بائیکاٹ کرنے والی جماعتیں بے نقاب ہوگئیں،سلیم حیدر

کراچی (اسٹاف رپورٹر) مہاجر اتحاد تحریک کے چیئرمین ڈاکٹر سلیم حیدر نے متحدہ قومی موومنٹ کی جانب سے آل پارٹیز کانفرنس کا نام نہاد وفاقی جماعتوں کی جانب سے بائیکاٹ کئے جانے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس عمل سے مہاجر دشمن ان جماعتوں کا چہرہ بے نقاب ہوگیا ہے جو صرف کراچی اور حیدرآباد کے مہاجروں کو اپنے مذموم مقاصد کیلئے استعمال کرنا چاہتے ہیں لیکن ان مہاجروں کے مسائل کے حوالے سے بات کرنے کو تیار نہیں۔ وہ MIT کے مرکزی اجلاس سے خطاب کررہے تھے۔ اس موقع پر بہارالدین شیخ، راشد قریشی، اعجاز شیخ ، فرید خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔ ڈاکٹر سلیم حیدر نے کہاکہ جیسے ہی ایم کیوایم کی جانب سے اے پی سی کی ہمیں دعوت ملی ہم نے کراچی اور مہاجروں کے وسیع تر مفاد میں اس کا خیرمقدم کیا اور ہم اس اے پی سی میں شرکت کرنا چاہتے تھے لیکن نام نہاد وفاقی جماعتوں کے رویئے کی وجہ سے یہ کانفرنس ملتوی ہوئی ۔ انہوں نے کہاکہ اب مہاجروں کو اپنی آنکھیں کھول لینی چاہئیں کہ وفاق کے نام پر کام کرنے والی یہ وفاقی جماعت اس حد تک متعصب ہیں کہ یہ مہاجر مسائل تو درکنار کراچی کے مسائل پر بھی بات کرنے کو تیار نہیں ۔ انہوں نے کہاکہ کراچی میں کام کرنے والی تمام مہاجر جماعتوں کے درمیان مفاہمت اور مشترکہ جدوجہد ہماری اولین خواہش ہے اور اس کیلئے سب سے پہلے ہماری جماعت نے ہی رائے عامہ ہموار کرنا شروع کی تھی جس کے نتیجے میں اس اے پی سی کا انعقاد کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ایم کیوایم سمیت کسی بھی جماعت پر ان حالات سے دلبرداشتہ نہیں ہونا چاہئے کیونکہ مہاجروں کیخلاف کئے جانے والے عمل کا یہ بھی ایک حصہ ہے۔ ہم اور ہماری جماعت مہاجر جماعتوں کے درمیان مفاہمت کی سیاست اور مشترکہ جدوجہد کے کام کو ہر حالت میں جاری رکھیں گے اور جلد ہی اس حوالے سے خود MIT ایک اے پی سی بلائے گی جس میں مہاجر حقوق اور کراچی کے مسائل کے حل کیلئے کام کرنے والی تمام جماعتوں کو مدعو کیا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ اب وقت آگیا ہے کہ تمام مہاجر اپنے وسیع تر مفاد میں متحد ہوجائیں اور صرف اور صرف ان قوتوں کا ساتھ دیں جو مہاجروں کے حقوق کی بات کرتی ہیں یا جن کا تشخص مہاجر ہے اور ان جماعتوں کو مسترد کردیں جو بظاہر تو وفاق اور مذہب کی باتیں کرتی ہیں لیکن عملی طورپر وہ وفاق اور مذہب کو کمزور کررہی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ہم ڈاکٹر فاروق ستار کی جانب سے بلائی جانے والی اے پی سی کو کراچی کے عوام اور مہاجروں کے مسائل کا حل سمجھتے ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر