زمیندار کی 10ماہ تک زیادتی، حمل ضائع کرانے کی کوشش، لڑکی ہلاک

زمیندار کی 10ماہ تک زیادتی، حمل ضائع کرانے کی کوشش، لڑکی ہلاک
زمیندار کی 10ماہ تک زیادتی، حمل ضائع کرانے کی کوشش، لڑکی ہلاک

  

پاکپتن (ویب ڈیسک) بااثر زمیندار کی محنت کش کی بیٹی سے 10ماہ تک زبردستی زیادتی، حاملہ ہونے پر ساتھیوں کی مدد سے گھر سے اٹھا کر حمل ضائع کروانے کی کوشش، زیادہ خون بہنے پر ملزمان سڑک کنارے پھینک کر فرار، متاثرہ نے تڑپ تڑپ کر جان دے دی پولیس چکبیدی نے ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا۔

’یہاں آنے والے عربیوں سے ہوشیار رہو، وہ تمہاری بیٹیوں کو۔۔۔‘ حیدر آباد کی مساجد سے لاﺅڈ سپیکر پر اعلانات، کیا کہا جارہا ہے؟ کوئی توقع بھی نہ کرسکتا تھا

تفصیلات کے مطابق تھانہ چکبیدی کے گاﺅں نوشیر جگیانہ کے رہائشی محنت کش منظور احمد کی عدم موجودگی میں گاﺅں کے بااثر زمیندار امداد نے اس کے گھر گھس کر اس کی بیٹی روبینہ کو اپنی ہوس کا نشانہ بنایا اور کسی کو نہ بتانے کی دھمکی دی اور 6 ماہ تک اسے زیادتی کا نشانہ بناتا رہا، متاثرہ حاملہ ہونے پر ملزم اپنے ساتھیوں کی مدد سے اس کے گھر آیا اور اسے بے ہوش کرکے گاڑی میں لے جاکر 6ماہ کا حمل ضائع کروادیا، خون زیادہ بہنے پر متاثرہ تڑپتی رہی، تشویشناک حالت میں ملزمان اسے سڑک کنارے پھینک کر فرار ہوگئے، متاثرہ نے تڑپ تڑپ کر جان دے دی، پولیس نے مقتولہ کے والد کی رپورٹ پر امداد وغیرہ پانچ ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا ہے۔

مزید : پاکپتن