بحریہ ٹاؤن نے کے ایم سی کے ساتھ کچرا اٹھانے کی مہم کا معاہدہ کرلیا، ملک ریاض کی میئر کراچی کو 10ارب روپے معاونت کی بھی پیشکش

بحریہ ٹاؤن نے کے ایم سی کے ساتھ کچرا اٹھانے کی مہم کا معاہدہ کرلیا، ملک ریاض ...
بحریہ ٹاؤن نے کے ایم سی کے ساتھ کچرا اٹھانے کی مہم کا معاہدہ کرلیا، ملک ریاض کی میئر کراچی کو 10ارب روپے معاونت کی بھی پیشکش

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) بحریہ ٹاﺅن کے بانی ملک ریاض ایک مرتبہ پھرمیدان میں آگئے اور بحریہ ٹاﺅن و کراچی میونسپل کارپوریشن کے درمیان رضاکارانہ طورپر کچرا اٹھانے کی مہم کا معاہدہ کردیااور میئر کراچی کو 10ارب روپے معاونت کی پیشکش بھی کردی جس پر میئرکراچی وسیم اختر نے ان کاشکریہ اداکرتے ہوئے کہاکہ بحریہ ٹاﺅن ہماری مدد کرے گا، کے ایم سی کے پاس مسائل کے انبار لگے ہوئے ہیں۔

ملک ریاض کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وسیم اختر کاکہناتھاکہ ہم مسلسل مسائل سے آگاہ کررہے ہیں،جب کچرے کے ڈھیر دیکھے گئے تو ملک ریاض نے مل کر کام کرنے کو کہا، ملک صاحب نے اپنی خواہش ظاہر کی، گیارہ لاکھ ٹن کا کچرا ہے، بحریہ ٹاﺅن ہمیں مشینری اور افرادی قوت بھی دیں گے۔

ملک ریاض کاکہناتھاکہ ’ہم میئرکراچی کیساتھ ہیں، جو کرسکے ، کریں گے، اگر ہم خود کو ٹھیک نہ کرسکے تو تباہ ہوجائیں گے، زرداری صاحب سے بھی بات ہوئی تو انہوں نے گوتھرو دیا، ہم نے میئرکراچی کو دس ارب روپے معاونت کی بھی پیشکش کی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ اس وقت ملک وقوم مشکل میں ہے ، دیگر مذاہب الگ الگ خدا کو مانتے ہیں لیکن سکون میں ہیں، ہم ایک خدا کو مانتے ہیںاور سکون نہیں، پہلا ہسپتال اور یونیورسٹی بھی مسلمانوں نے بنایا، وہ کہاں تھے اور کہاں چلے گئے ، ہمیں سوچنا پڑے گا۔انہوں نے کہاکہ بحریہ ٹاﺅن کراچی کو ٹھیک کرنے کے لیے ہرحدتک جائے گا، اللہ نے جوہمیں دیا وہ اس کی اور عوام کی امانت ہے، کراچی کی ترقی کے لیے سب کچھ کریں گے،منافقت سے قومیں تباہ ہوتی ہیں۔ ہیلتھ کی بہتری، بے روزگاری اور دہشتگردی کے خاتمے تک ملک مستحکم نہیں ہوگا، ہمیں اس پر مزید کام کرنا ہے۔

مزید : قومی