معروف ترین ٹیکسی سروس ’’کریم ‘‘ نے نجی و سرکاری سیکٹرز میں پارٹنر شپ کے فروغ اور کمپنی کے معیار کو بہتر بنانے کے لئے نادیہ رشدی کو سماجی شعبے کی سربراہ مقرر کر دیا

معروف ترین ٹیکسی سروس ’’کریم ‘‘ نے نجی و سرکاری سیکٹرز میں پارٹنر شپ کے ...
معروف ترین ٹیکسی سروس ’’کریم ‘‘ نے نجی و سرکاری سیکٹرز میں پارٹنر شپ کے فروغ اور کمپنی کے معیار کو بہتر بنانے کے لئے نادیہ رشدی کو سماجی شعبے کی سربراہ مقرر کر دیا

  

لاہور(ویب ڈیسک)’’ کریم‘‘  دنیا کی معروف ترین ٹیکسی سروس ہے جو مشرق وسطیٰ، شمالی افریقہ اور دیگر خطوں کے ممالک میں کامیابی سے اپنی سروس جاری رکھے ہوئے ہے، اب کمپنی نے نادیہ رشدی کو اپنے شعبہ استحکام و سماجی تاثر کی سربراہ تعینات کر دیا ہے،  نادیہ رشدی اپنے فرائض سرانجام دیتے ہوئے اندرونی و بیرونی سطح پر کمپنی کے استحکام کی کوششوں کی سربراہی کریں گی اور کمپنی کی طویل المدتی حکمت عملی کو مربوط کرنے ، کاروبار، ماحولیات اور معاشرے پر اس کے مثبت اثرات مرتب کرنے کے لیے کام کریں گی، یہ فرائض سرانجام دیتے ہوئے نادیہ رشدی ’’ کریم‘‘  کے بورڈ اوراعلیٰ انتظامی افسران کے ساتھ مل کر کام کریں گی تاکہ اپنے فرائض کی ادائیگی میں اٹھائے گئے اقدامات میں ان کی حمایت حاصل کرسکیں، مزید براں وہ بیرونی شراکت داروں کے ساتھ معاملات نمٹانے کا فریضہ بھی سرانجام دیں گی اورنجی و سرکاری سیکٹرز میں پارٹنرشپ کے فروغ کے لیے کام کریں گی۔

نادیہ رشدی کی تقرری پر کریم کے شریک بانی اور چیف پیپل آفیسر ڈاکٹر عبداللہ الیاس کا کہنا تھا کہ ”کریم ‘‘ نے اپنی سروس کے ذریعے معاشرے اور ماحولیات پر مثبت اثرات مرتب کرنے کا عزم کر رکھا ہے اور یہ عزم ہمارے کارپوریٹ ڈی این اے کا حصہ ہے،ہمارا کاروبار اور دنیا کے ساتھ ہمارا رابطہ اسی نقطے کے گرد گھومتا ہے، یو این ایچ سی آر کے اشتراک سے کام کرتے ہوئے ہم ماضی میں معاشرتی مسائل کے ناقابل یقین اثرات کا مشاہدہ کر چکے ہیں جس کے بعد ہم نے معاشرے اور ماحولیات کے حوالے سے سرمایہ کاری کا فیصلہ کیا ہے۔

عبداللہ الیاس کا مزید کہنا تھا کہ ”نادیہ رشدی سسٹین ایبلٹی مینجمنٹ اور سماجی و ماحولیاتی منصوبہ بندی کے حوالے سے مضبوط پس منظر اور خصوصی مہارت رکھتی ہیں، ہمارے اس شعبے کی سربراہ بن کر وہ ہمارے اس مشن مزید کو نئی بلندی اور کامرانی سے روشناس کرائیں گی۔ نادیہ رشدی  استحکام اور اس سے متعلقہ معاملات میں’’  کریم‘‘  کی انٹرنل اور عوامی سفیر کے طور پر کام کریں گی، ہمارے کاروباری مفادات اور سماجی ترقی کی سرگرمیوں کی سمت اندازی میں ان کا کردار بنیادی اہمیت کا حامل ہو گا۔

مزید :

بزنس -