پی پی پی نوشہرہ کے جیالوں کا صوبائی صدر کیخلاف علم بغاوت بلند

پی پی پی نوشہرہ کے جیالوں کا صوبائی صدر کیخلاف علم بغاوت بلند

  

نوشہرہ(بیورورپورٹ)پاکستان پیپلز پارٹی ضلع نوشہرہ کے سینئر جیالوں نے پاکستان پیپلز پارٹی کے صوبائی صدر کے خلاف علم بغاوت بلند کرتے ہوئے صوبائی صدر ہمایون خان نے پی پی پی میں من مانے فیصلے مسلط کر دئیے ہیں اور ضلع نوشہرہ میں ضلعی کابینہ کو بغیر کسی نوٹس ختم کرکے نئی ضلعی کابینہ مسلط کرکے ضلع نوشہرہ کے عہدیداروں، امیدواروں اور کارکنوں کی توہین کی ہے پارٹی آئین کی خلاف ورزی ار قوائد و ضوابط کے مطابق پہلی ضلعی کابینہ سے مشاورت کرکے کابینہ کو تحلیل کرتے اور پھر ضلع نوشہرہ کے تمام کارکنوں اور امیدواران قومی و صوبائی سمبلی کو اعتماد میں لیکر باہمی مشاورت سے نئے شمولیت کرنے والے اور پرانے کارکنان پر مشتمل نئی ضلعی کابینہ تشکیل دیتے تو بہتر ہوتا اس سلسلے میں پاکستان پیپلز پارٹی ضلع نوشہرہ کے سینئر جیالوں کا ایک اہم اجلاس ملک غلام حضرت کی کی صدارت میں انکی رہائشگاہ پر منعقد ہوا اجلاس میں شریک تمام شریک سینئر کارکنان نے آصف علی زرداری اور فریال تالپور پر من گھڑت اور جھوٹے مقدموں میں پھنسا کر جیل میں ناروا سلوک اور انتقامی کاروائی کی بھر پور مذمت کی سلیکٹیڈ حکومت نے کشمیر کا سودا کر لیا ہے عوام مہنگائی کی سونامی میں تباہ ہو رہے ہیں ملک میں افراتفری اور انارکی پھیلی ہوئی ہے حکومت خواب خرگوش کے مزے لوٹ رہی ہے اجلاس میں شریک کارکنان نے کہا کہ ہم ضلع نوشہرہ کے تمام کارکنان کا احترام کرتے ہیں لیکن پی پی پی میں منفی پروپیگنڈیں کرنے والوں کو خبردار کرتے ہیں کہ پیپلز پارٹی کسی کے باپ کی جاگیر نہیں ہم پارٹی نہیں چھوڑے گے اور نہ اب تک کسی جیالے نے پارٹی چھوڑی ہے اور نہ چھوڑے گے کیونکہ ہم نے تادم مرگ شہیدوں کی خون سے عہد وفا کیا ہے جیالے اپنے حق کیلئے بھر پور آواز اٹھاکر صوبائی صدر کی بلیک میلنگ سے چھٹکارا دلا ئیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -