خیبر پختونخوا میں بین الا قوامی طرز کی ماڈل فیبر یکیشن لیبارٹریاں بنائیں گے: کامران بنگش

خیبر پختونخوا میں بین الا قوامی طرز کی ماڈل فیبر یکیشن لیبارٹریاں بنائیں گے: ...

  

پشاور(سٹاف رپورٹر) وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی کامران خان بنگش نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت صوبے میں جامعات کی اکیڈیمیا کے ساتھ مل کر انفارمیشن ٹیکنالوجی کی فروغ کے لئے ٹھوس اقدامات اٹھا رہی ہیں۔ تا کہ جدید ٹیکنالوجی کی بدولت نوجوانوں کو برسرروزگار کیا جائے، اور عوامی خدمات کی فراہمی بھی جلد از جلد ہو۔ ہماری حکومت کی روز اول سے کوشش ہے کہ بین الاقوامی معیار کی جدید ٹیکنالوجی صوبے میں متعارف کی جائے تا کہ طلباء و طالبات جدید دور کے تقاضوں کے مطابق ملک و قوم کی خدمت کر سکیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کو اپنے آفس میں غلام اسحق خان انسٹیٹوٹ سے ڈائریکٹر آفس آف ریسرچ، انوویشن اینڈ کمرشلائزیشن پروفیسر ڈاکٹر وسیم خان کی سربراہی میں آئے ایک وفد سے ملاقات کے دوران کیا۔ وفد نے محکمہ سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی کی جانب سے سپانسرڈ د و پراجیکٹس ٹیکنکل انکیوبیشن سنٹر اور فنکشنل ریورس انجینئرنگ کے حوالے سے اب تک ہونے والی پیشرفت و کارکردگی سے آگاہ کیا۔ دیگر جامعات تک فیبریکیشن لیبارٹریز کا دائرہ کار بڑھانے کی جانب اشارہ کرتے ہوئے کامران بنگش نے ہدایات جاری کیں کہ ایک ماڈل فیبریکیشن لیب بنا دی جائے تا کہ اس ماڈل کو دیگر جامعات میں اپنایا جائے، جس سے دیگر جامعات کے وہ طلباء جو سائنس و انفارمیشن سے جڑے ہیں بھی مستفید ہوسکیں۔انہوں نے کہا کہ ملک میں صوبہ خیبرپختونخوا س وقت میں سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی کے لحاظ سے تیسرے نمبرپر ہے، جبکہ ہماری کوشش ہے کہ اس کو مزید بہتر بناکر پہلی پوزیشن پر آجائیں۔ ون سٹاپ سلوشن کی جانب محکمہ سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی کی پیش رفت انتہائی حوصلہ افزاء ہے۔ اور بہت جلد ایک چھت کے نیچے عوام کو خدمات کی فراہمی یقینی بنالیں گے۔ جبکہ ہماری توجہ صرف پشاور پر نہیں بلکہ دیگر اضلاع پر بھی توجہ مرکوز کئے ہوئے ہیں۔ کامران بنگش نے واضح کیا کہ خیبرپختونخوا میں بین الاقوامی طرز کی فیبریکیشن لیبارٹری کے قیام کے لئے رائرسن یونیورسٹی فرانس سے تکنیکی مدد لی جائیگی، جس سے مطلوبہ عمل بروقت پایہ تکمیل تک پہنچ جائے گا۔ملاقات میں معاون خصوصی کو ٹیکنکل انکیوبیشن سنٹر اور فنکشنل ریورس انجینئرنگ پراجیکٹس کے بارے میں درپیش چیلنجز سے بھی آگاہ کیاگیا۔جس پر انہوں نے موقع پر ہی متعلقہ حکام کو احکامات جاری کرتے ہوئے کہاکہ عوامی فلاح کے منصوبوں میں کسی قسم کی تاخیر برداشت نہیں کریں گے تاکہ حقیقی تبدیلی جلد از جلد محسو س کی جا سکے۔ وفد نے معاون خصوصی کامران بنگش کا شکریہ ا دا کرتے ہوئے محکمہ سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی کی عوام دوست کارکردگی کی تعریف کی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -