شانگلہ، ٹرانسپورٹرز کا کرایوں میں خود ساختہ اضافہ، عوام پریشان

شانگلہ، ٹرانسپورٹرز کا کرایوں میں خود ساختہ اضافہ، عوام پریشان

  

الپوری(ڈسٹرکٹ رپورٹر)شانگلہ ضلع بھر میں ٹرانسپورٹروں کا کرایوں میں خود ساختہ اضافہ،موٹر میں گنجائش سے زائد سواریوں کو بھٹاتے ہیں،منگورہ جانے والے ٹوڈی موٹرمیں چار کے بجائے پانچ سواریاں بھٹا کر ان سے تین سو کرایہ کے بجائے چار سو روپے کرایہ لیا جارہا ہے۔کرایوں میں خودساختہ اضافے پر عوام کا شدید ردعمل۔انتظامیہ سے اقدامات اٹھائے کا مطالبہ۔گاڑیوں پٹرول، ڈیزل کے قیمتوں میں دو بار اضافے کے بعد اب گاڑیاں پرانے کرایوں پر نہیں چلا سکتے،ٹرانسپورٹ اتھارٹی اور ضلع انتظامیہ ٹرانسپورٹ کرایہ میں اضافے کیلئے اقدامات اٹھائے۔ پرانی کرایہ پر اب ہماری گاڑیاں خسارے میں ہیں،مقررہ کرایوں پر گاڑیوں کے اخراجات کیساتھ ساتھ مالکان اور ڈرائیورز کی گزارہ بھی مشکل ہے، اگر پٹرول قیمتوں میں اضافے کے بعد ہمارے کرایوں میں اضافہ نہیں کیا گیا تو ضلع بھر میں پہیہ جام ہڑتال ہوگی۔کرایوں پر نظر ثانی کی جا ئے مطالبہ۔ ادھر عوامی حلقوں نے خود ساختہ اضافے یکساں مسترد کرتے ہوئے اس اقدام کو انتظامیہ کی بے بسی قرار دیا۔اس سے پہلے بھی شانگلہ میں ٹرانسپورٹ کیلئے کوئی مقررہ کرایہ نامہ موجود نہیں اگر پرانا کرایہ نامہ ہو بھی تو اس پر عمل درآمد نہیں ہوپاتا۔الپوری ٹرانسپوٹرزایک دو کلومیٹ بکنگ پر بھی تین سو روپے وصول کرتے ہیں۔عوام کوشدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔کوئی پرسان حال نہیں ہے انتظامیہ ٹھس سے مس نہیں ہورہے ہیں عوام انتظامیہ کی بے بسی کارونا رو رہے ہیں۔لیلونئی ٹرانسپورٹ اڈہ کوغیر موذون جگہ پر تبدیل کیا گیا ہے جسکی وجہ سے غریب عوام کو انتہائی مشکلات درپیش ہیں اور بچے بوڑھے اور خواتین پرانے اڈہ سے پیدل چل کر نئے قائم ادہ تک سفرکرنا پڑ رہا ہے لیلونئی اڈہ کیلئے کوئی روٹین مقررنہیں ہے اور اکثر گاڑیاں چلانے کے قابل بھی نہیں اور اناڑی اور غیر لائسنس یافتہ ڈرائیورزکے خلاف کارروائی سے ٹریفک والے کتراتے ہیں۔یہی حال شانگلہ کے دیگر ٹرانسپورٹ اڈوں کا ہے الپوری، بیلے با با،ڈھیری، کروڑہ، شاہپور،داموڑی،بشام شنگ،دندئی، مارتونگ،الوچ،چکیسر سمیت ضلع بھر میں ہیں۔ملک بھر میں پٹرول، ڈیزل کے قیمتوں میں ؎ ا ضافے کے بعد ٹرانسپورٹ یونین شانگلہ نے بھی کرایہ میں خودساختہ نا مناسب اضافہ کر دیا۔جس پرعوام کا شدید ردعمل سامنے اگیا ہے۔ اس حوالے سے ٹرانسپورٹرزکاکہنا تھا کہ ایندھن کے قیمتوں میں اضافے کے بعد اب پرانی کرایوں میں گاڑی نہیں چلا نا مشکل ہے۔ ایندھن کے قیمتوں میں اضافے کے بعد اب گاڑی خسارے میں ہیں،ایندھن قیمتوں کے مطابق ہمارے کرایوں پر نظرثانی کرکے مناسب اضافہ کیا جائے، آل شانگلہ ٹرانسپورٹ یونین کے عہدیداروں نے واضح کرتے ہوئے کہا کہ اگر کرایوں میں مناسب اضافہ نہیں کیا گیا تو ضلع بھر میں پہیہ جام ہڑتال ہوگی،عہدیداروں کا کہنا تھا کہ عوام کو تکلیف نہیں دینا چاہتے تاہم گاڑی چلانے والے بھی غریب ہیں، لہٰذا ضلعی انتظامیہ اور ٹرانسپورٹ اتھارٹی خاموشی کے بجائے اقدامات اٹھائے،ہمارے گاڑیاں خساروں میں چلتی ہے جو اب ناقابل برداشت ہوچکا ہے۔۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -