ماحولیات کمیشن کی سفارشات پر قانون سازی کی جارہی ہے، مرتضی وہاب 

ماحولیات کمیشن کی سفارشات پر قانون سازی کی جارہی ہے، مرتضی وہاب 

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)وزیر اعلی سندھ  کے مشیر ماحولیات و ساحلی ترقی بیرسٹر مرتضی وہاب نے ماحولیاتی کمیشن کی اعلی سطحی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہا ہے کہ فضائی و آبی آلودگی کے خاتمہ کے لیئے عملی اقدامات کیئے جارہے ہیں اور اس کام کو عملی جامہ پہنانے کیلئے تمام پاکستانیوں کو مل جل کر حکومتی اقدامات کا ساتھ دینا ہوگا۔ اجلاس میں کمشنر ماحولیاتی کمیشن ڈاکٹر پرویزحسین، سیکریٹری ماحولیات پنجاب سلمان اعجاز، ڈائریکٹر جنرل ماحولیات فرزانہ، سیکریٹری ماحولیات سندھ خان محمد مہر، ڈائریکٹر جنرل سندھ انوائرمینٹل پروٹیکشن ایجنسی نعیم مغل اور دیگر عہدیداروں نے شرکت کی۔ ماحولیاتی اقدامات کے حوالہ سے ڈاکٹر پرویز حسین نے مشیر ماحولیات کو بتایا کہ اسٹیٹ بینک کی مشاورت اور مالیاتی اداروں کے تعاون سے خشت سازی کے کارخانوں کو آسان شرائط پر قرضے فراہم کیئے جائیں گے تاکہ وہ اینٹوں کے بھٹوں جو ماحول دوست بنانے کیلئے ٹریٹمنٹ ایکوپمینٹ نصب کرسکیں۔ مشیر ماحولیات نے اس اہم پیش رفت کو ماحول دوست بنانے کیلئے مثبت کاوش قرار دیا۔ انہوں نے ہدایت کی کہ فضائی و آبی آلودگی عالمی مسئلہ بن چکی ہے اس سے نپٹنے کیلئے پوری قوم کو متحد ہو کر آلودگی کی عفریت کو قابو کرنا ہوگا ورنہ یہ ہماری آنے والی نسلوں کیلئے گھمبیر مسئلہ بن جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ آلودگی سے بچانا ہمارا قومی فرض ہے اس کیلئے مذہبی اسکالر اور آئمہ کرام سے بھی مشاورت کی جائے تاکہ وہ عوام کو درخت لگانے کی مذہبی اہمیت سے روشناس کرائیں انہوں نے مزید کہا کہ ماحول کو سازگار بنانے کیلئے کوالٹی اسٹینڈرڈز پر کوئی سمجھوتہ نہ کیا جائے اور ساحلی علاقوں کو پاک صاف رکھنے کیلئے علاقائی کمیونٹی کو طلبا کے ذریعہ متحرک کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ آلودگی پر قابو پانے کیلئے ہر ممکن کوشش کی جائے اور اس ضمن میں کوئی دقیقہ فروگزاشت نہ کیا جائے کیونکہ یہ ہمارا مشترکہ مسئلہ ہے اور ہمیں اپنی آنے والی نسلوں کو اس عذاب سے بچانا ہے۔ 

مزید :

صفحہ اول -