سوشل میڈیا پر اشتعال انگیزی پھیلانے والوں کی سخت نگرانی کی جارہی ہے: سی سی پی او 

سوشل میڈیا پر اشتعال انگیزی پھیلانے والوں کی سخت نگرانی کی جارہی ہے: سی سی پی ...

  

لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)سوشل میڈیا پر شرانگیزی، نفرت انگیز تقاریر، تصاویر اور فرقہ واریت کو بڑھاوا دینے والے خلاف موثر اقدامات کئے جارہے ہیں، ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ، سی ٹی ڈی، پولیس اور پی ٹی اے کی مشترکہ ٹیمیں تشکیل دی گئیں ہیں، جلوسوں کے روٹس پر موبائل سروس جزوی طور پر بند رہے گی جبکہ موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر مکمل پابندی عائد ہوگی، جلوس کے روٹس کو خاردار تاروں، کناتوں اور بئیریرز لگاکر محفوظ بنایا جائے گا جبکہ کورونا ایس او پیز کے حوالے سے حکومتی گائیڈ لائنز کی مکمل پاسداری کروائی جائے گی، ان خیالات کا اظہار سی سی پی او لاہور ذوالفقار حمید نے امام بارگاہ پانڈو سٹریٹ اور نویں محرم الحرام کے جلوس کے روٹ کا جائزہ لیتے ہوئے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا،  انہوں نے ایس ایس پی آپریشنز لاہور فیصل شہزاد کے ہمراہ محرم الحرام کے عملی اقدامات کا جائزہ لیا، ایس پی سٹی تصور اقبال نے جلوس کے روٹس، سٹی ڈویعن میں مجالس اور ان کی سیکیورٹی اور سیفٹی کے انتظامات پر برہفنگ دی، ان کا کہنا تھا کہ 1190 مجالس اور 235 جلوس برآمد ہوتے ہیں، سی سی پی او لاہور ذوالفقار حمید نے جلوسوں، مجالس کی سیکورٹی اور سیفٹی انتظامات کا جائزہ لیا اور جلوس اور مجالس کے آرگنائزرز، منتظمین سے ملاقات بھی کی، وزٹ کے موقعہ پر منتظمین نے سی سی پی او لاہور کو یقین دہانی کروائی کہ جلوسوں اور مجالس میں کورونا وباکے پیش نظر حکومتی گائیڈز کی پاسداری کو یقینی بنایا جائے۔

، سربراہ لاہورپولیس نے ایس پی سٹی اور ایس پی سول لائنز کو ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ علاقے میں موجود کرایہ داروں اور ہوسٹلز میں رہائش پذیر افراد کے کوائف چیک کریں،ملحقہ علاقوں میں سرچ آپریشنز، پارکس اور مارکیٹوں میں بھی روزانہ کی بنیاد پر سرچ آپریشنز کئے جائیں۔ جلوس اور مجالس میں کورونا ایس او پیز کی مکمل پاسداری کروائی جائے۔ بغیر ماسک اور ہینڈ سینی ٹائز کئے بغیر کو شرکت نہ کرنے دی جائے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ محرم الحرام میں تمام جلوسوں اور مجالس کو بھرپور سکیورٹی فراہم کریں گے۔ 

جلوس کے روٹس پر ڈبل سواری چلنے پر پابندی ہوگی۔ پولیس افسران محرم الحرام کی سکیورٹی کے تمام تر انتظامات قبل از وقت مکمل کر لیں اور شیعہ رہنماوں، مجالس اور جلوسوں کے منتظمین و لائسنس ہولڈرز کی باہمی مشاورت سے انتظامات یقینی بنائیں،  محرم الحرام کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ لاہور بھر میں 650 سے زائد جلوسوں اور 5 ہزار دو سو سے زائد مجالس کو فول پروف سیکیورٹی فراہم کی جائے گی۔

مزید :

علاقائی -