حکمرانوں کی ناقص پلاننگ سے  بحران جنم لے رہیں‘ مہنگائی اور بے روز گاری بڑھ گئی‘ ذیشان اختر

   حکمرانوں کی ناقص پلاننگ سے  بحران جنم لے رہیں‘ مہنگائی اور بے روز گاری ...

  

بہاول پور(بیورورپورٹ) نائب امیر جماعت اسلامی جنوبی پنجاب سید ذیشان اختر نے  کہا ہے کہ محرم الحرام کا آغاز ہی شہادتوں کے سفر سے ہوتا ہے۔حضرت امام حسین ؓ اور شہدائے کربلا سے پہلے یکم محرم کو خلیفہ (بقیہ نمبر20صفحہ6پر)

دوئم اور مراد رسولؐ حضرت عمرفاروق ؓ کو نماز فجر کے دوران شہید کردیا گیا۔ساڑھے 23لاکھ مربع میل کے حکمران کی ذاتی زندگی انتہائی عجز و انکساری میں گزری۔ان کی زندگی ہمارے آج کے ان حکمرانوں کیلئے ایک مثال ہے جو نام تو ریاست مدینہ کا لیتے ہیں اور کام سارے اس کے خلاف کرتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ آج پاکستان کے عوام غربت کی چکی میں پس رہے ہیں،مہنگائی اور بے روزگاری نے لوگوں کی زندگی اجیرن کردی ہے۔اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوان ہاتھوں میں ڈگریاں پکڑے روز گار کی تلاش میں مارے مارے پھر رہے ہیں اور اپنے مستقبل سے انتہائی پریشان اور مایوس ہیں۔انہوں نے کہا کہ شہید المحراب حضرت عمر فاروق ؓ  کا فرمان کہ اگر فرات کے کنارے کتا بھی بھوکا مرگیا تو عمر سے اس کی جواب دہی ہوگا۔حضرت عمر فاروقؓ نے ہمیشہ عدل و انصاف سے فیصلے کیے اور کبھی اپنی ذات کو عام مسلمانوں پر ترجیح نہیں دی۔انہوں نے کہا کہ حضرت عمر فاروق ؓ  نے جس اسلامی و فلاحی ریاست کا تصور دیا اور اسے دنیا کے سامنے ایک ماڈل کے طور پر پیش کیا حکمرانوں کو اس کو اپنانے کی ضرورت ہے۔اگر مدینہ کی ریاست کا نام لینے والے حضرت عمر فاروق ؓ  کے نظام حکومت کو اختیار کرلیں تو تمام مسائل حل ہوسکتے ہیں۔

ذیشان اختر

مزید :

ملتان صفحہ آخر -