تین سالہ بچہ اغواء اور زیادتی کے بعد قتل ، 15 سالہ ملزم گرفتار لیکن پھر اس قبیح فعل کی ایسی وجہ بتائی کہ شیطان بھی کانوں کو ہاتھ لگائے

تین سالہ بچہ اغواء اور زیادتی کے بعد قتل ، 15 سالہ ملزم گرفتار لیکن پھر اس قبیح ...
تین سالہ بچہ اغواء اور زیادتی کے بعد قتل ، 15 سالہ ملزم گرفتار لیکن پھر اس قبیح فعل کی ایسی وجہ بتائی کہ شیطان بھی کانوں کو ہاتھ لگائے

  

راولپنڈی (ویب ڈیسک) ٹیکسلا پولیس نے نر توپہ گاؤں میں 3 سالہ بچے کو مبینہ طور پر بدفعلی کے بعد قتل کرنے کے الزام میں ایک 15 سالہ لڑکے کو گرفتار کرلیا،لڑکے نے پولیس کو بتایا کہ اس کے بعد اس نے بچے کا گلا دبایا اور گھر کے قریب ایک جگہ دفن کردیا جبکہ سب ڈویژنل پولیس افسر اسلم ڈوگر نے کہا کہ لڑکے نے بچے کے والد سے بدلہ لینے کے لیے اسے مبینہ طور پر بدفعلی کے بعد قتل کیا لڑکے نے بچے کے والد پر جنسی استحصال کرنے کی کوشش کرنے کا الزام لگایا۔

ڈان نیوز کے مطابق ہزرو پولیس سٹیشن کی حدود میں  پیر آباد کے رہائشی بچے کے والد نے پولیس کو بتایا کہ اس کا 3 سالہ بیٹا 20 اگست کو گھر سے باہر گیا اور اس کے بعد غائب ہوگیا جس کے بعد شک کی بنیاد پر پولیس نے اسی گلی میں رہنے والے ایک 15 سالہ لڑکے کو گرفتار کیا جس نے تفتیش کے دوران اس بات کا اعتراف کیا کہ اس نے بچے کو اغوا کے بعد بدفعلی کا نشانہ بنایا۔

بعدازاں پولیس نے بچے کی لاش برآمد کر کے اسے پوسٹ مارٹم کے لیے تحصیل ہیڈکوارٹرز ہسپتال منتقل کردیا جس نے (لڑکے کے) مشتبہ بیان کی تصدیق کردی۔اسلم ڈوگر نے بتایا کہ ملزم کے خلاف اغوا، جنسی زیادتی اور قتل کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

مزید :

جرم و انصاف -علاقائی -پنجاب -راولپنڈی -