شانگلہ کو ہمیشہ نظر انداز کیا گیا: شوکت علی یوسف زئی 

شانگلہ کو ہمیشہ نظر انداز کیا گیا: شوکت علی یوسف زئی 

  

 الپوری(آفتاب حسین)صوبائی وزیر محنت و ثقافت،انسانی حقوق و پارلیمانی امور شوکت یوسف زئی نے کہا ہے کہ گزشتہ ادوار میں شانگلہ کو یکساں نظراندار کرکے ان کو پسماندگیوں کی تاریکی میں رکھا گیا اگر گزشتہ منتخب ٹولا شانگلہ کی سیاحت پر توجہ دیتا تو یاں روزگار سمیت کاروبار سے یہاں کی پسماندگی ختم ہوسکتی تھی اور باہر سے لوگ یہاں سیاحتی علاقوں میں سرمایہ کاری کرتے۔ہم نے شانگلہ کے مختلف سیاحتی علاقوں کو ترجیہی بنیادوں پر رکھتے ہوئے ان مقامات تک پختہ سڑکوں کی تعمیر کو یقینی بنایا تاکہ اس علاقے کو دنیا کو دکھا سکیں۔شانگلہ میں سیاحت پر خصوصی توجہ دے کر اس کی تقدیر بدل سکتی ہے۔شانگلہ میں ہرشعبے میں اربوں روپے کے ترقیاتی کام جاری ہیں جس سے علاقے میں پسماندگی کا خاتمہ ممکن ہوسکے گا۔ان خیالات کا اظہارصوبائی وزیر شوکت یوسف زئی نے گزشتہ روز یونین کونسل الپوری کے بالائی علاقے مانڑی سرمیں پر وقار شمولیتی جلسے سے خطاب کرتے وئے کہی۔شمولیتی جلسے میں مسلم لیگ ن کے اہم رہنما اور سابق ویلج ناظم حبیب خان اور افسر خان، ظاہر زادہ، گل محمد، ضیاء الدین، خائستہ محمد، علی خان، وزیر زادہ، سربالی اور آصف خان اپنے خاندان اور درجنوں ساتھیوں سمیت صوبائی وزیر شوکت یوسفزئی کی قیادت میں پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کی، صوبائی وزیر شوکت یوسفزئی،اخترچٹان،محمد خالق،اسلام زادہ، شاہ جی، ظفر علی، فضل اکبر، اور دیگر مقامی ورکرز نے شامل ہونے والے لوگوں کو تحریک انصاف کے کارواں میں خوش آمدید کہا، مبارکباد دی اور ان کو پارٹی کیپ پہناتے ہوئے ان کو ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ ہماری پہلی کوشش ہے کہ شانگلہ کے دورافتادہ بالائی علاقوں کو دیگرعلاقوں کی طرح سہولیات فراہم کریں،پختہ سڑکوں کی تعمیر کریں،پینے کے صاف پانی کی سکیمیں اور سکول،ہسپتال کی بنیادی سہولیات سے آراستہ کریں۔اس موقع پر نئے شامل ہونے والے افراد میں وزیرعظم عمران خان،وزیراعلیٰ محمودخان اور شوکت یوسف زئی کی قیادت پر مکمل اعتماد کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شوکت یوسف زئی نے شانگلہ کی ترقی کیلئے جو اقدامات کئے وہ سب کے سامنے ہیں اور انھوں نے شانگلہ کی پسماندگی کے خاطر اپنی حکومت میں ہر فورم پر آواز اٹھایا ہے۔۔

مزید :

صفحہ اول -