کابل ایئر پورٹ کی صورتحال بہتر ہونے سے انخلا کا عمل تیز ہوگا: پاکستانی سفیر

کابل ایئر پورٹ کی صورتحال بہتر ہونے سے انخلا کا عمل تیز ہوگا: پاکستانی سفیر

  

 کابل: (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستانی سفیر منصور احمد خان کا کہنا ہے کہ افغانستان میں دیرپا امن کیلئے کوششیں کر رہے ہیں، کابل میں تمام دھڑوں کی حکومت چاہتے ہیں۔ ایئرپورٹ کی صورتحال بہتر ہونے سے انخلا کا عمل تیز ہوگا۔ پاکستانی سفارتخانے کی زبردست کوششوں کو دنیا بھر میں سراہا جا رہا ہے۔ نجی ٹی وی سے گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ کابل میں پاکستانی سفارتخانہ دن رات کام کر رہا ہے۔ غیر ملکیوں کے علاوہ بہت سے افغان شہری بھی افغانستان سے جانا چاہتے ہیں۔انہوں نے واضح کیا کہ پاکستان پرامن افغانستان چاہتا ہے، یہاں ایسی حکومت آنی چاہیے جسے افغان عوام کا اعتماد حاصل ہو۔ منصوراحمد خان کاکہنا تھا کہ بھارت کا افغانستان میں منفی کردار رہا ہے، اس نے ہمیشہ سیاسی حل کی مخالفت کی۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی سفارتخانے کی کاوشوں میں غیر ملکی وفود، صحافیوں اور دیگر افراد کو نکالنے کے لئے ویزے میں نرمی بھی شامل ہے۔ 20 اگست کو پی آئی اے کی دو خصوصی پروازوں کے ذریعے 350 غیرملکیوں کو پاکستان پہنچایا گیا۔منصور احمد خان نے کہا کہ ایئرپورٹ بند ہونے کے باعث افغانستان میں پھنسے پاکستانی شہریوں کو ذمہ داری کے ساتھ طورخم بارڈر سے پاکستان بھجوایا۔

پاکستان

مزید :

صفحہ اول -