کورونا ایس او پیز کی آڑ میں سندھ حکومت نے کراچی پر کاری وار کیا ہے: مصطفی کمال 

کورونا ایس او پیز کی آڑ میں سندھ حکومت نے کراچی پر کاری وار کیا ہے: مصطفی ...

  

 کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاک سرزمین پارٹی کے چیئرمین سید مصطفی کمال نے کہا ہے کہ کورونا ایس او پیز کی آڑ میں نااہل اور متعصب سندھ حکومت نے پاکستان کی معاشی شہ رگ کراچی پر کاری وار کیا ہے۔ پیپلز پارٹی نے سندھ کا مستقبل تاریک کرنے میں اب کوئی کسر نہیں چھوڑی۔ تمام تعلیمی اداروں میں ایس او پیز پر باآسانی عمل کرایا جاسکتا ہے، تعلیمی اداروں کی بندش سے طالب علموں پر جو منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں اس کے اثرات بہت دور تک جائیں گے۔ بچوں اور انکے اہل خانہ کی ویکسینیشن یقینی بنا کر اسکول باآسانی کھولے جا سکتے ہیں لیکن گھوسٹ تعلیمی اداروں اور اساتذہ کے نام پر کرپشن کرنے والی پیپلزپارٹی کی سندھ حکومت کی ترجیحات میں تعلیم سرے سے شامل نہیں ہے کیونکہ اگر معاشرہ تعلیم یافتہ ہوگیا اور اپنے حقوق کا سوال کرنے لگا تو یہ ظالم حکمران فارغ ہوجائیں گے۔ انکی کوشش ہے کہ عوام کو اتنا پسماندہ کر دیں کہ وہ انکے سامنے سر اٹھانے اور سوال کرنے کی قوت کھو دیں۔ پیپلز پارٹی اب تک صرف ہم سے دشمنی کر رہی تھی اب ہماری نسلوں سے دشمنی پر اتر آئی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے کنٹونمنٹ بورڈ کے حوالے سے پاکستان ہاس میں منعقدہ میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ سید مصطفی کمال نے مزید کہا کہ اب ہمارے پاس اس کے علاوہ کوئی راستہ نہیں کہ ظالم کا ہاتھ روکیں، ہم نے آواز لگا کر بھی دیکھ لیا، جو لوگ خاموش تماشائی بنے ہوئے ہیں وہ بھی ظالم کے ساتھی ہیں، ان میں اور ظلم کرنے والوں میں کوئی فرق نہیں ہے۔ سندھ میں پیپلز پارٹی کی متعصبانہ حکومت نہ پینے کا پانی دیتی ہے، نہ کچرا اٹھاتی ہے، نہ علاج معالجے کی سہولیات ہیں، تعلیم تباہ کر دی گئی، نوجوانوں کو کوٹے پر بھی نوکری نہیں ملتی، جو روزگار پرائیویٹ سیکٹر سے ملتا تھا اب اسے بھی تباہ کیا جا رہا ہے، فیکٹریاں صوبے سے منتقل ہو رہی ہیں، لوگ تیزی سے بے روزگار ہو رہے ہیں، کورونا کے نام پر چھوٹے تاجروں کے گھروں کے چولہے بجھا دیئے گئے ہیں، متوسط طبقے کے لوگ دو کی جگہ ایک وقت کھانا کھانے پر مجبور ہیں۔ ترقی صرف حکمرانوں کے محلوں میں ہو رہی ہے۔۔

مزید :

صفحہ آخر -