وہ 11 علامات جن کے ظاہر ہونے پر ڈائٹنگ چھوڑ دینی چاہیے

وہ 11 علامات جن کے ظاہر ہونے پر ڈائٹنگ چھوڑ دینی چاہیے
وہ 11 علامات جن کے ظاہر ہونے پر ڈائٹنگ چھوڑ دینی چاہیے

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک)لوگ موٹاپے سے نجات کے لیے ڈائٹنگ کرتے ہیں جو کسی حد تک فائدہ مند بھی ہوتی ہے لیکن اب ماہرین نے مسلسل ڈائٹنگ کے سنگین نقصانات بتا دیئے اور 11ایسی علامات بتا دی ہیں جو آپ میں ظاہر ہوں تو آپ کو ڈائٹنگ ترک کر دینی چاہی۔ دی سن کے مطابق ماہرین کا کہنا ہے کہ مسلسل ڈائٹنگ انسان کی جسمانی و ذہنی صحت پر انتہائی منفی اثرات مرتب کرتی ہے اور اسے کئی طرح کے عارضوں کا شکار بنا دیتی ہے۔ ڈائٹنگ کرتے ہوئے ایک وقت ایسا آتا ہے جب یہ آدمی کو اس کی عادت پڑ جاتی ہے اور اس میں کئی طرح کی علامات ظاہر ہونے لگتی ہیں۔ یہی وہ وقت ہوتا ہے جب ہر صورت ڈائٹنگ ترک کر دینی چاہیے۔ ماہرین کی بیان کردہ یہ علامات مندرجہ ذیل ہیں:۔

خاص مقدار میں کیلوریز جلانے کے لیے ورزش کرنا

ایک پابند ڈائٹ پر عمل پیرا ہونا

معیوب سمجھے جانے والے فوڈ گروپس سے گریز کرنا یا ان کے استعمال میں کمی لانا، جیسا کہ شوگر، چکنائی اور ڈیری مصنوعات وغیرہ

خوراک کھاتے ہوئے شرم یا پچھتاوا محسوس ہونے لگنا

کھانے کو بھی روایات کا پابند کر لینا

بھوک کو نکوٹین، پانی یا کافی وغیرہ کے استعمال سے ختم کرنے کی کوشش کرنا

ایسی جگہوں پر جانے سے گریز کرنا جہاں کھانا صرف کیا جاتا ہو۔

ذہن میں اپنے باڈی امیج کے متعلق انتہائی مضبوط منفی جذبات اور احساسات پالناشروع کر دینا

باقاعدگی سے اپنا وزن کرنا اور اس کے نتیجے کے متعلق آپ کے روئیے کا تبدیل ہونا

موٹاپے پر شرمندگی کا رویہ اپنانا

وزن اور باڈی امیج کو لے کر دوسروں سے حسد کرنا

ماہرین کا کہنا تھا کہ”یہ گیارہ علامات ایسی ہے جن سے ظاہر ہوتا ہے کہ اب آپ کے جسم نے ڈائٹنگ کو قبول کر لیا ہے یا دوسرے لفظوں میں آپ کو ڈائٹنگ کی لت پڑ گئی ہے۔ ان علامات کے ظاہر ہونے پر آپ کو فوراً ڈائٹنگ ترک کردینی چاہیے اور خوراک اور باڈی امیج کے متعلق اپنے روئیے پر نظرثانی کرنی چاہیے۔ بصورت دیگر ڈائٹنگ سے آپ کو سنگین جسمانی و ذہنی نقصان بھی پہنچ سکتا ہے۔

مزید :

تعلیم و صحت -