احمد مسعود کا گروپ اب تک کتنے طالبان کو قتل کرچکا ہے؟ بڑا دعویٰ سامنے آگیا

احمد مسعود کا گروپ اب تک کتنے طالبان کو قتل کرچکا ہے؟ بڑا دعویٰ سامنے آگیا
احمد مسعود کا گروپ اب تک کتنے طالبان کو قتل کرچکا ہے؟ بڑا دعویٰ سامنے آگیا

  

کابل(مانیٹرنگ ڈیسک) کابل سمیت پورے افغانستان پر طالبان جس سرعت کے ساتھ بغیر کسی بڑی مزاحمت کے قابض ہوئے ہیں، صوبہ پنجشیر میں انہیں اتنی ہی سخت مزاحمت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جہاں احمد مسعود ’نیشنل ریزسٹنس فرنٹ‘ کی سربراہی کرتے ہوئے طالبان کے خلاف برسرپیکار ہیں۔ احمد مسعود معروف کمانڈر احمد شاہ مسعود کے بیٹے ہیں۔ احمد شاہ مسعود نے 2002ءمیں امریکہ خفیہ ایجنسی سی آئی اے کے حمایت یافتہ جنگجو گروہ ’ناردن الائنس‘ کی قیادت کی تھی اور طالبان کی حکومت کا خاتمہ کرنے میں کردار ادا کیا تھا۔

رپورٹ کے مطابق اب اپنے باپ کے نقش قدم پر چلتے ہوئے برطانیہ سے تعلیم حاصل کرنے والے 32سالہ احمد مسعود طالبان سے نبردآزما ہیں اور ان کا گروپ اب تک 60سے 100طالبان کو قتل کر چکا ہے۔انہوں نے کنگزکالج لندن سے ڈگری حاصل کی اور پھر سندھرسٹ رائل ملٹری اکیڈمی سے 1سالہ فوجی تربیتی کورس کیا۔ افغانستان کے نائب صدر امراللہ صالح، جن کا کابل میں جاسوسی کا نیٹ ورک ہے، احمد مسعود اور ان کی باغی فوج کی حمایت کر رہے ہیں۔

ذرائع کے مطابق گزشتہ تین دن سے افغانستان کی بچی کھچی نیشنل ڈیفنس اینڈ سکیورٹی فورس پنجشیر پہنچ کر احمد مسعود کے گروہ میں شامل ہو رہی ہے، جس سے اس کی طاقت میں اضافہ ہو رہا ہے۔ دوسری طرف طالبان بھی باقی صوبوں سے پنجشیر پہنچ رہے ہیں اور آئندہ دنوں میں پنجشیر میں خونریز لڑائی کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔ واضح رہے کہ احمد مسعود کے والد کو ’پنجشیر کا شیر‘ کے نام سے شہرت حاصل ہے۔ انہیں نائن الیون سے چند دن قبل القاعدہ کے دہشت گردوں نے قتل کر دیا تھا۔

مزید :

بین الاقوامی -