افغانستان میں نئی حکومت کے قیام میں تاخیر کیوں کی جا رہی ہے؟ بڑا دعویٰ

افغانستان میں نئی حکومت کے قیام میں تاخیر کیوں کی جا رہی ہے؟ بڑا دعویٰ
افغانستان میں نئی حکومت کے قیام میں تاخیر کیوں کی جا رہی ہے؟ بڑا دعویٰ

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینئر صحافی ارشاد عارف نے دعویٰ کیا ہے کہ افغانستان میں حکومت سازی میں تاخیر غیر ملکی افواج کی موجودگی کی وجہ سے کی جا رہی ہے۔

اپنے ایک ٹویٹ میں ارشاد عارف نے کہا " اطلاعات کے مطابق افغان طالبان نئی حکومت مکمل فوجی انخلا کے بعد تشکیل دیں گے تاکہ امریکہ رخنہ اندازی کر سکے نہ وسیع االبنیاد حکو مت کا کریڈٹ لے، یہ آزاد افغانستان کی خود مختار حکومت ہو گی۔"

خیال رہے کہ طالبان نے 15 اگست کو پورے افغانستان پر قبضہ کرلیا تھا۔ اس کے بعد سے طالبان کے حکومت سازی کیلئے مختلف دھڑوں کے ساتھ مذاکرات کا سلسلہ جاری ہے۔ افغانستان میں انتقالِ اقتدار کیلئے قومی مصالحتی کمیشن کے سربراہ ڈاکٹر عبداللہ عبداللہ، سابق صدر حامد کرزئی اور حزبِ اسلامی کے سربراہ گلبدین حکمت یار پر مشتمل کونسل بھی تشکیل دی گئی ہے جو طالبان سے مذاکرات کر رہی ہے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -