غیر شادی شدہ امریکی کلچر ری پبلکنز کےلئے دردِ سر بن گیا

غیر شادی شدہ امریکی کلچر ری پبلکنز کےلئے دردِ سر بن گیا

واشنگٹن(اے پی اے )امریکہ کا غیر شادی شدہ کلچر ری پبلکنز کے لئے دردِ سر بن گیا ،شادی رجحانات میں کمی امریکی سیاست پر براہ راست اثرات چھوڑ رہی ہے،امریکی اخبار اکانومسٹ میں شائع مضمون میں کہا گیا ہے کہ شادی خواتین کی نسبت غیر شادی خواتین ووٹ دینے کے حق کا بھر پور استعمال کر تی ہیں ،2012کے صدارتی انتخابات میں ووٹ ڈالوں میں سے ایک تہائی ایسی خواتین تھیں جو عمرگزیدہ ہونے کے باوجود غیر شادی شدہ ہیں ۔امریکی صدر باراک اوبامہ کو ملنے والے کل ووٹوں میں سے ان غیر شادی شدہ خواتین کے 36فیصد ووٹ فیصلہ کن رہے ۔ امریکہ کا غیر شادی شدہ کلچر ری پبلکنز کے لئے دردِ سر بن چکا ہے۔شائع مضمون میں کہا گیا کہ ان خواتین میں کثیر تعداد کالج سٹوڈنٹس کی ہے جبکہ اس گروپ میں طلاق یافتہ پروفیشنل بھی شامل ہیں ۔ حتی کہ ابھی تک غیر شادی شدہ امریکی خواتین بظاہر ڈیمو کریٹس کی وفادار ہیں ۔شادیوں میں لمبا خلا امریکی معاشرے میں بے راہ روی کا باعث بھی بناہوا ہے۔اکانومسٹ کا مزید کہنا تھا کہ غیر شادی شدہ خواتین کی ڈیموکریٹس کے ساتھ بے انتہا حمایت ہی اس کی کامیابی کی وجہ بنی ہوئی ہے ،گذشتہ صدارتی انتخابات میں اوبامہ ،مٹ رومنی کو 11فیصد ووٹ سے ہراپائے ، باراک اوبامہ کی جیت ان کی غیر شادی شدہ خواتین کی مرہون منت ہے ۔

مزید : عالمی منظر