پنجاب:مزید پانچ اضلاع کے تھانوں میں فرنٹ ڈیسک بنانے کا فیصلہ

پنجاب:مزید پانچ اضلاع کے تھانوں میں فرنٹ ڈیسک بنانے کا فیصلہ
 پنجاب:مزید پانچ اضلاع کے تھانوں میں فرنٹ ڈیسک بنانے کا فیصلہ

  

 لاہور( کرائم رپورٹر)لاہور پولیس کے 10تھانوں میں کمپیوٹرائزڈ ہیلپ ڈیسک کے پائلٹ کی کامیابی کے بعد اسے مزید پانچ بڑے اضلاع کے 141تھانوں میں شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ جس کا مقصد شکایت کنندگان کوبغیر کسی خوف و ہراس کے اپنے مسائل ایک بہتر ماحول میں متعلقہ تھانے تک پہنچانا ہے۔اس بات کا فیصلہ گز شتہ روز انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب مشتاق احمد سکھیر ا کی سربراہی میں منعقد ہونے والے ایک اجلاس میں کیا گیا ۔یہ اجلاس سنٹرل پولیس آفس میں منعقد ہوا جس میں ایڈیشنل آئی جی آپریشنز / انوسٹی گیشن کیپٹن (ر) عارف نواز، ایڈیشنل آئی جی ویلفےئر اینڈ فنانس سہیل خان، ایڈیشنل آئی جی ڈی آئی جی ہیڈ کوارٹرز فاروق مظہر ، ڈی آئی جی ویلفےئر جان محمد، ڈی آئی جی I.T شاہد حنیف، AIGآپریشنز وقار عباسی، AIGفنانس حسین حبیب امتیاز،AIGلاجسٹکس ہمایوں بشیر تارڑاور AIGمانیٹرنگ وقاص الحسن کے علاوہ دیگر سینئر افسران نے شرکت کی۔جن پانچ اضلاع کے تھانوں میں فرنٹ ڈیسک بنائے جائیں گے ان میں لاہورکے علاوہ فیصل آباد، ملتان، راولپنڈی اور گوجرانوالہ شامل ہیں۔ فرنٹ ڈیسک کے لئے حکمت عملی طے کرتے ہوئے یہ فیصلہ کیا گیا کہ ان فرنٹ ڈیسک میں کام کرنے والے I.Tٹرینڈ سویلین لڑکے اور لڑکیوں کوباقاعدہ بھرتی کیا جائے گا۔ جنہیں بعد ازاں پولیس کے ماسٹر ٹرینرز45دن کی اضافی ٹریننگ دیں گے۔ اجلاس میں سی پی او میں قائم کمپلینٹ ہینڈلنگ سنٹر (CHC) سسٹم میں مزید بہتری کے لئے مختلف تجاویز پر غور کیا گیا اور یہ فیصلہ کیا گیا کہ جعلی ایف آئی آر کے اندراج کے ساتھ ساتھ ایف آئی آر میں بے گناہوں کے ناموں کو شامل کرنے، ان کی گرفتاریوں اور نظر بندیوں کو روکنے کے لئے حکمت عملی طے کی گئی۔اجلاس میں پنجاب پولیس کے ہیومن ریسورس کو کمپیوٹرائزڈ کرنے کے عمل کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اور یہ فیصلہ کیا گیا کہ اسے مرحلہ وار مکمل کیا جائے گا اور سب سے پہلے لاہور کا ڈیٹا مکمل کیا جائے گا۔ اجلاس میں پولیس یونیفار م کی تبدیلی کے بارے میں بھی مختلف رنگوں اور سٹائل پر غور کیا گیا۔ اس موقع پر AIGلاجسٹکس نے آئی جی پنجاب کو بتایا کہ اس سلسلے میں نمونے اگلے ہفتے پیش کیے جائیں گے۔ اجلاس میں یہ فیصلہ بھی کیا گیا کہ پولیس ملازمین کی بیواؤں کو وظیفے کے لئے ATMکارڈز کا اجراء اس مہینے کے آخر میں بنکوں کی کلےئرنس کے بعد کر دیا جائے گا۔ جبکہ بیواؤں کی دیگر ادائیگیوں کو مرحلہ وار ATMکارڈز پر شفٹ کرنے کی تجویز پر بھی غور کیا گیا۔

مزید :

علاقائی -