نوجوان پڑھ لکھ کر ملک کا بوجھ بٹائیں،شیر علی گورچانی

نوجوان پڑھ لکھ کر ملک کا بوجھ بٹائیں،شیر علی گورچانی

  

لاہور (نمائندہ خصوصی)ڈپٹی سپیکر پنجاب اسمبلی سردار شیر علی خان گورچانی نے کہا کہ پنجاب کی 60فیصد آبادی نوجوانوں پر مشتمل ہے جنہیں تربیت دیئے بغیر ترقی کے عمل کا حصہ نہیں بنایا جاسکتا۔حکومت پنجاب چاہتی ہے کہ ہمارے نوجوان پڑھ لکھ کر معاشرے پر بوجھ بننے کی بجائے ملک کا بوجھ بٹائیں۔پنجاب میں پہلی مرتبہ نوجوانوں کی فنی تربیت کا وسیع تر پروگرام تشکیل دیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم نوجوانوں کوایسے شعبوں میں تربیت دے رہے ہیں جس کی پاکستانی صنعت اور تجارت کو ضرورت ہے۔لڑکیوں کو فنی تربیت دینے کے لئے بھی خصوصی فنڈ رکھے گئے ہیں۔ٹیوٹا، پنجاب سکلز ڈویلپمنٹ فنڈ اور پنجاب ووکیشنل ٹریننگ کونسل کے اشتراک سے ملکی و بین الاقوامی صنعتی ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے افرادی قوت کی سکلز ٹریننگ کے ذریعے بہتر پیداوار اور خدمات کی فراہمی یقینی بنائیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جامپور میں TEVTA اداروں سے تربیت یافتہ 412 بچوں کو اسناد، سیفٹی اور ٹول کٹ دینے کی تقریب میں خطاب کے دوران کیا۔ڈپٹی سپیکر پنجاب نے TEVTA سے412 تربیت یافتہ بچوں میں اسناد اور ٹول کٹ بھی تقسیم کی ۔ تقریب میں ڈی سی او راجن پورڈی سی او راجن پورچوہدری ظہور حسین ، محمد ضیاء الرحٰمن چیف ایگزیکٹوآواز فاؤنڈیشن پاکستان،میاں ظہور، ملک کریم نواز، سردار عامر گورچانی، محمد اکبر، صفدر ملک سمیت دیگر مہمانوں، بچوں اور والدین نے بھی شرکت کی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ وزیراعلی کی موجودگی میں ٹیکنیکل ایجوکیشن اینڈ ووکیشنل ٹریننگ اتھارٹی(ٹیوٹا) اور برطانیہ کے دو اداروں کے درمیان مختلف معاہدوں پردستخط کئے گئے جس کی فنی تعلیم میں مزید بہتری آئے گی۔آج دانش سکولوں کی بدولت پنجاب کے آخری ضلع میں بھی وہ ہی تعلیمی سہولیات میسر جو اعلیٰ تعلیمی ادرے فراہم ہیں۔محمد ضیاء الرحٰمن چیف ایگزیکٹوآواز فاؤنڈیشن پاکستان نے کہا کہ آواز فاؤنڈیشن پاکستان نے جنوبی پنجاب کے تقریباً اڑھائی ہزار پڑھے لکھے نوجوانوں کو فنی و تکنیکی تربیت کے لئے حکومتی اور پرائیویٹ اداروں کو جدید سہولتیں فراہم کیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -