مختلف امراض میں مبتلا مریضوں کی مدد کی جارہی ہے،نفیسہ شاہ

مختلف امراض میں مبتلا مریضوں کی مدد کی جارہی ہے،نفیسہ شاہ

  

خیرپور (خصوصی نامہ نگار)پیپلزپارٹی کی مرکزی ڈپٹی سیکریٹری جنرل رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر سیدہ نفیسہ شاہ جیلانی نے کہا ہے کہ پیپلز پارٹی کی حکومت عوام کو بہتر طبی سہولیات فراہم کرنے کے لیے پیپلز ویلفیئر ٹرسٹ قائم کرکے کینسر، دل، ہیپاٹائٹس، اور دیگر امراض میں مبتلا متاثرین کی مالی مدد کی جارہی ہے جبکہ غریب اور مستحق طلبہ و طالبات کو ڈسٹرکٹ اسکالر شپ بورڈ کے توسط سے تعلیم کے حصول کے لیے بہتر اقدامات کررہی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے خیرپور جم خانہ کلب میں پیپلز ویلفیئر ٹرسٹ اور ڈسٹرکٹ اسکالر شپ بورڈ کی کارکردگی کے حوالے سے جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر سیدہ نفیسہ شاہ جیلانی نے کہا کہ ضلع بھر کے مختلف بیماریوں میں مبتلا افراد کو طبی سہولیات اور مالی مدد فراہم کرنا ہمارا فرض ہے اس سلسلے میں تمام مریضوں کو ڈاکٹرز کے بورڈ کی جانب سے سفارش پر اسپتالوں میں دوائیں اور دیگر بطی سہولیات فراہم کرنے کے لیے اقدامات میں تیزی لائی جائے انہوں نے پیر منگیوں کے جل جانے والے نوجوان منظور حسین کلہوڑو کو طبی سہولت اور مالی مدد فراہم کرنے کی خاص ہدایت کی انہوں نے ٹرسٹ کو ہدایت کی کہ وہ ریڑھ کی ہڈی کے مریضوں کی طرف بھی توجہ دیں انہوں نے کہا کہ عوام کو رلیف فراہم کرنے کے لیے وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ کی جانب سے فنڈز فراہم کیے جارہے ہیں انہوں نے ٹرسٹ کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کیا۔ رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر سیدہ نفیسہ شاہ جیلانی نے اسکالر شپ بورڈ کے عہدیداروں کو ہدایت کی کہ وہ غریب اور مستحق و بے سہارا طلبہ و طالبات کو بہتر تعلیم کے حصول کے لیے قواعد کے مطابق مالی مدد فراہم کی جائے انہوں نے پیپلز ویلفیئر ٹرسٹ اور ڈسٹرکٹ اسکالر شپ بورڈ کو ضم کرنے کا اعلان کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر خیرپور کو ہدایت کی کہ وہ اس سلسلے میں آرڈر جاری کریں اور دونوں اداروں کو ایک جگہ پر آفس بھی قائم کرکے دیں انہوں نے کہا کہ تعلیم کے حصول میں کسی بھی طالب علم کو مالی مدد کے سلسلے میں کوئی رکاوٹ نہیں ہونی چایئے انہوں نے ہدایت کی کہ پیپلز ویلفیئر ٹرسٹ اور ڈسٹرکٹ اسکالر شپ کے جانب سے فنڈز کی فراہم کے سلسلے میں قانونی مدد لی جائے اور قانون اور ضابطے کے مطابق کام کیا جائے اجلاس میں ڈپٹی کمشنر خیرپور منور علی مٹھانی، ٹرسٹ کی سب کمیٹی کے چیئرپرسن سید صغیر حسین زیدی، سیکریٹری نظیر احمد ڈنور نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ ٹرسٹ نے کینسر کے 85 مریضوں کو 1931659 روپے، دل کے 37 مریضوں کو 708000 روپے، ہیپا ٹائٹس کے 72 مریضوں کو 1810000 روپے اور جگر کے مریضوں کو 2941190 روپے کی مالی مدد فراہم کی ہے جبکہ ڈسٹرکٹ اسکالر شپ بورڈ کے میر سجاد حسین ٹالپور اور سیکریٹری پروفیسر ممتاز حسین مغل نے بتایا کہ گزشتہ سال کے دوران قواعد اوضوابط کے مطابق 1583 درخواستیں موصول ہوئیں جس میں سے 900 طلباء و طالبات کو قانون اور معیار کے مطابق کم سے کم 6 ہزار روپے اور زیادہ سے زیادہ 25 ہزار روپے کی مالی مدد فراہم کی گئی ہے ۔ رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر سیدہ نفیسہ شاہ جیلانی نے دونوں اداروں کے عہدیداروں کو ہدایت کہ وہ اپنے کام کو مزید بہتر کریں اور مالی مدد کے سلسلے میں جامع منصوبہ بندی کرتے ہوئے کاغذی کاروائی کو بہتر طریقے سے مکمل کریں انہوں نے اسکالر شپ کے لیے ازسر نو درخواستیں لینے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ جلد اعلان کیا جائے اس موقع پر پیپلز پارٹی کی رہنما سیدہ ارشاد جیلانی، وزیر اعلیٰ سندھ کے پرسنل سیکریٹری مظہر خان، علی شیر مکول اور دیگر متعلقہ افسران بڑی تعداد میں موجود تھے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -