داعش کے خلاف جنگ کیلئے ٹرمپ کو مل کر کام کرنا ہوگا: شوکت عزیز

داعش کے خلاف جنگ کیلئے ٹرمپ کو مل کر کام کرنا ہوگا: شوکت عزیز
داعش کے خلاف جنگ کیلئے ٹرمپ کو مل کر کام کرنا ہوگا: شوکت عزیز

  

واشنگٹن (ویب ڈیسک) سابق وزیراعظم شوکت عزیز نے کہا ہے کہ داعش کے خلاف جنگ کیلئے نومنتخب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو اپنے دوست اور دوست نما دشمنوں کو قریب رکھنا ہوگا۔ ایک امریکی چینل سے گفتگوکرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ داعش کسی ایک ملک کا مسئلہ نہیں ہے۔ یہ دنیا کے لئے خطرہ ہے اسے ختم کرنے کیلئے سب کو مل کر کام کرنا سیکھنا ہوگا اور اپنا حصہ ڈالنا ہوگا۔ ہمارے سامنے اس وقت دہشتگردی اور انتہا پسندی کا چیلنج ہے۔ اس کے محرکات جاننا ہوں گے۔ یہ ایک فوجی مسئلہ نہیں۔ آپ صرف عوام پر بمباری کرکے انتہا پسندی اور دہشتگردی کا خاتمہ نہیں کرسکتے۔ حقیقت میں اس سے زیادہ دہشتگرد پیدا ہوتے ہیں۔

روزنامہ پاکستان کی تازہ ترین اور دلچسپ خبریں اپنے موبائل اور کمپیوٹر پر براہ راست حاصل کرنے کیلئے یہاں کلک کریں‎

دہشتگردی سے نمٹنے کے لئے انہوں نے اقوام متحدہ کے مزید فعال کردار کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ اقوام متحدہ کے امن مشن کو اگلے محاذوں پر آکر امن قائم کرنا ہوگا۔ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ارکان اور عالمی طاقتوں کو مزید متحرک ہونا ہوگا۔ شوکت عزیز نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کی غیر متوقع فطرت کو مدنظر رکھتے ہوئے یہ کہنا قبل از وقت ہوگا کہ وہ مسلمانوں پر پابندی کے بیان پر قائم رہیں گے۔

مزید :

بین الاقوامی -