برطانوی عوام نے مو فاراح کو نظراندازکردیا،ساتھی کھلاڑی مایوس

برطانوی عوام نے مو فاراح کو نظراندازکردیا،ساتھی کھلاڑی مایوس

  

لندن( آن لائن ) اولمپک گولڈ میڈلسٹ الیسٹر برونلی اور نک اسکیلٹون نے بی بی سی اسپورٹس پرسنالٹی ایوارڈ میں برطانوی عوام کی جانب سے اولمپک لیجنڈ مو فاراح کو نظرانداز کیے جانے پر مایوسی کا اظہار کیا ہے۔برونلی اس کیٹیگری میں فاتح اینڈی مرے کے بعد دوسرے نمبر پر رہے تھے جب کہ اینڈی مرے کی اہلیہ کم سیئرز کا ووٹ پانے والے ایتھلیٹ اسکیلٹون نے تیسری پوزیشن پر اختتام کیا، اینڈی مرے کو تقریباً ڈھائی لاکھ ووٹ ملے تھے جو برونلی کو ملنے والے ووٹ سے دوگنے شمار ہوئے۔مو فاراح مقبولیت کی دوڑ میں چوتھے نمبر پر رہے، اگرچہ انھوں نے سابق اولمپکس مقابلوں میں 2 بار 5 اور10 ہزار میٹرکی ریسز میں طلائی تمغے جیت کر سابق انگلش چیمپئن لیس ویرن کی ہمسری بھی کی تھی، جنھوں نے یہ کارنامہ 1972 اور1976 میں انجام دیا تھا۔دونوں برطانوی ایتھلیٹس برونلی اور اسکیلٹون نے کہا کہ فاراح کی ذاتی کہانی بھی شاندار ہے، وہ کم عمری میں جنگ زدہ سومالیہ سے انگلینڈ پہنچے تھے، جس کے بعد سے برطانیہ ہی ان کیلیے سب کچھ رہا، ہوسکتا ہے بہت سے لوگ انہیں برٹش خیال نہیں کرتے ہوں لیکن ان کا یہ ایوارڈ نہیں جیت پانا افسوسناک ہے۔

مزید :

کھیل اور کھلاڑی -