ہری پور، آگ کی بھٹی میں جھلس کر شدید زخمی ہونے والا غریب مزدور چل بسا

ہری پور، آگ کی بھٹی میں جھلس کر شدید زخمی ہونے والا غریب مزدور چل بسا

  

ہری پور (بیورورپورٹ) حطار، مجاہد سٹیل فیکٹری میں انتظامیہ کی غفلت سے آگ کی بھٹی میں جھلس کر شدید زخمی ہونے والا غریب مزدور چل بسا، تھانہ حطار پولیس فیکٹری مالکان کو گرفتار کرنے میں ناکام، حطار مجاہد سٹیل فیکٹری میں اس سے قبل بھی سریا بھٹی پلانٹ میں نوجوان گر کر زندہ جل گیا، با اثر مل انتظامیہ نے مزدور کے لواحقین سے راضی نامہ کرکے کیس ختم کر دیا، فیکٹری میں اس سے قبل کتنی اموات ہوئی جو کسی ریکارڈ میں نہیں، ہیومن رائٹس، لیبر ڈائریکٹر بھی خاموش تماشائی، حطار پولیس کی جانب سے فیکٹری مالکان ملزمان کے خلاف ابھی تک لیت و لعل سے کام لینے پر ڈی پی او ہری پور شہزاد ندیم بخاری فوری نوٹس لیں، واقعہ کے مطابق طارق ولد محبوب عالم سکنہ ڈنگی ہری پور جو کہ حطار مجاہد سٹیل میں کام کرتا تھا کہ مجاہد سٹیل فیکٹری میں مالکان کی جانب سے حفاظتی اقدامات نہ ہونے کے باعث مورخہ 10-12-16 کو سریا بھٹی میں آگ کی لپیٹ میں آکر بری طرح جھلس گیا جسے انتہائی تشویش ناک حالت میں ہری پور ہسپتال لانے کی بجائے ٹیکسلا کی ایک ہسپتال میں رکھا گیا جہاں غریب مزدور کا علاج برائے نام کیا گیا جس کی وجہ سے غریب مزدور طارق محمود زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا، اس واقعہ کو تھانہ حطار پولیس سے خفیہ رکھنے کی کوشش کی گئی لیکن پولیس نے اپنے ذرائع سے اس کیس کو ٹریس کیا اور ملزمان مجاہد سٹیل مل مالکان کے خلاف کارروائی کرنے سے قاصر ہیں جنہوں نے ابھی تک فیکٹری مالکان کی گرفتاریاں عمل میں نہیں لائی جاسکی اور یہی ظاہر ہوتا ہے کہ فیکٹری انتظامیہ بچ بچاؤ کیلئے راضی نامہ کی کوشش کررہی ہیں یہاں قابل ذکر بات یہ ہے کہ حطار کی فیکٹریوں میں مزدور زندہ جل رہے ہیں کٹر مشینوں میں قیمتی جانیں ضائع ہورہی ہیں اور اکثر آج بھی اپنے جسمانی اعضاء سے محروم ہیں جن کی کفالت کرنے سے ان معزور فیکٹری، کارخانے دار اور ملز مالکان نے صاف انکاری کردی، جبکہ دیگر چیک اینڈ بیلنس ہری پور ادارے اپنا اپنا حصہ لے کر خاموش ہو جاتے ہیں یہی وجہ ہے کہ حطار فیکٹریوں کے مالکان کی آج تک گرفتاریاں نہ ہوسکیں، ڈی پی او ہری پور مل انتظامیہ کو فوری گرفتار کرکے انہیں عدالت میں پیش کرکے انصاف کا بول بالا کریں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -